جمعہ , 7 اکتوبر 2022

جن علاقوں میں عام پاکستانی نہیں جا سکتے وہاں امریکی سفیر کے لیے سرکاری بریفنگ اور ریڈ کارپٹ کا اہتمام کیا گيا۔شیریں مزاری

اسلام آباد:پاکستان تحریک انصاف کی راہنما اور سابق وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم کے دورہ طورخم پر شدید تنقید کی ہے۔

ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں شیریں مزاری نے لکھا کہ امریکی سفیر اور اس کے گینگ نے طورخم جاتے ہوئے حساس علاقوں پر پرواز کی اور جائزہ لیتے رہے، جن علاقوں میں عام پاکستانی نہیں جا سکتے وہاں امریکی سفیر کے لیے سرکاری بریفنگ اور ریڈ کارپٹ کا اہتمام کیا گيا۔ ان علاقوں میں تو عام پاکستانی بھی قدم نہیں رکھ سکتے! کیا ہم غلام ہیں؟

انہوں نے مزید کہا ہے کہ کیا بلوم وائسرائے ہیڈ اور ان کا نام اور تکبر سب پرحاوی ہے؟

رہنما پی ٹی آئی کا یہ بھی کہنا ہے کہ تبدیلی حکومت کی امریکی سازش کے ایجنڈے کا ایک اور نکتہ پورا ہوا، کیا ہم غلام ہیں؟

یہ بات یاد رکھیں کہ پاکستان میں  متعین امریکی سفیر ڈونلڈبلوم نے 3 اگست کو طورخم میں پاک افغان بارڈر کا دورہ کیا تھا۔اور امریکی ایمبیسی اسلام آباد اور پشاور نے ٹیوٹر  پر امریکی سفیر کے دورے کی تصاویر شیئر کی اور بتایا کہ آج پاکستان میں امریکی سفیر ڈونلڈ بلوم نے طورخم بارڈر کا دورہ کیا ہے، جہاں انہیں سیکیورٹی حکام نے بریفنگ دی۔

 

 

 

 

 

 

 

 

یہ بھی دیکھیں

سائفر سے فائدہ اٹھانے والے اس کی تحقیقات کیسے کرسکتے ہیں؟ عمران خان

اسلام آباد: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ اسمبلی میں کسی …