بدھ , 28 ستمبر 2022

اگر عدلیہ نے مایوس کیا تو مظاہرین کوئی اور فیصلہ لے سکتے ہیں۔مقتدیٰ صدر

بغداد: مقتدیٰ صدر نے عدالت سے استدعا کی ہے کہ صدر سے نئے انتخابات کی تاریخ طے کرنے کو کہا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ایوان کو تحلیل کرنے کے لیے پارلیمنٹ کے اجلاس کی ضرورت نہیں تاہم عدلیہ کو اس معاملے میں مداخلت کرتے ہوئے ایوان کو تحلیل کرنے کا حکم جاری کرنا چاہیے، اسی طرح عدلیہ کو صدر سے نئے انتخابات کی تاریخ کا فیصلہ کرنے کا مطالبہ کرنا چاہیے۔

مقتدیٰ صدر نے دھمکی دی کہ احتجاج جاری رہے گا اور اگر عدلیہ نے مایوس کیا تو مظاہرین کوئی اور فیصلہ لے سکتے ہیں۔ انہوں نے اس دوسرے فیصلے کے بارے میں زیادہ تفصیلات نہیں بتائی۔

عراقی وزیر اعظم مصطفیٰ الکاظمی نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کے پاس مذاکرات کے سوا کوئی چارہ نہیں ہے۔

کوآرڈینیشن فریم ورک نامی ایک بڑے اتحاد نے کہا ہے کہ اداروں کا تحفظ کیا جائے گا اور ایسی حکومت بنائی جائے گی جو ملک کو موجودہ بحران سے نکالے گی۔ اتحاد نے عوام سے کہا کہ وہ آئین کی حمایت کریں اور جمہوری طریقے سے حکومت کی تشکیل میں مدد کریں۔اتحاد نے اپنے حامیوں سے کہا کہ وہ بڑے پیمانے پر احتجاج اور آئین اور اداروں کے دفاع کے لیے باہر نکلیں۔

یہ بھی دیکھیں

ایران ایسا ملک نہیں جس میں کوئی بغاوت اور انقلاب کر سکے:امیر عبداللیہان

نیویارک: ایرانی وزیر خارجہ نے اس بات پر زور دیا کہ "ایران ایسا ملک نہیں …