بدھ , 28 ستمبر 2022

ممکنہ جوہری معاہدے کے موقع پر بولٹن کے قتل اور رشدی پر حملہ کرنے کا دعویٰ عجیب ہے۔محمد مرندی

تہران:ویانا میں ایرانی جوہری مذاکراتی ٹیم کے مشیر محمد مرندی نے جمعہ کے روز پیغمبر اسلام کی شان میں گستاخانہ کتاب ‘شیطانی آیات’ کے مصنف  سلمان رشدی پر حملے کی خبر کے ردعمل میں کہا ہے کہ جوہری معاہدے کی بحالی کے قریب پہنچنتے ہی، بولٹن کے قتل اور رشدی پر حملہ کا دعوی عجیب بات ہے.

انہوں نے کہا کہ میں میں اس مصنف جس نے مسلمانوں اور اسلام کے خلاف نہ ختم ہونے والی نفرت اور حقارت کو جنم دیا ہے، کے لیے آنسو نہیں بہاؤں گا ۔

مرندی نے مزید کہاکہ کیا یہ عجیب بات نہیں کہ جوہری معاہدہ کے قریب آنے کے ساتھ امریکہ نے جان بولٹن کو قتل کرنے کی کے لیے کچھ الزامات لگایا ہے اور اب ایسا ہو رہا ہے؟پیغمبر اسلام کی شان میں گستاخی کرنے والی کتاب ‘آیات شیطانی کے مصنف سلمان رشدی پر جمعہ کو مقامی وقت کے مطابق حملہ کیا گیا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران ایسا ملک نہیں جس میں کوئی بغاوت اور انقلاب کر سکے:امیر عبداللیہان

نیویارک: ایرانی وزیر خارجہ نے اس بات پر زور دیا کہ "ایران ایسا ملک نہیں …