بدھ , 28 ستمبر 2022

سوات میں ہماری واپسی معاہدے کے تحت ہوئی ہے۔طالبان

اسلام آباد:ڈسٹرکٹ سوات کی تحصیل مٹہ اور تحصیل کبل میں تحریک طالبان پاکستان کی واپسی۔ تھانے پر حملہ پولیس مقابلے میں ڈی ایس پی پیر سعید زخمی۔ طالبان کا کہنا ہے افغانستان سے ہماری واپسی معاہدے کے تحت ہوئی ہے۔

سوشل میڈیا پر ایسی ویڈیوز بڑی تعداد میں شیئر کی جا رہی ہیں جن میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ سوات میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے جنگجووں نے علاقوں پر قبضہ کرلیا ہے۔ ایک ویڈیو ایسی بھی شیئر کی گئی ہے جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ طالبان کے جنگجووں نے مبینہ طور پر پاک فوج کے جوانوں اور پولیس اہلکاروں کو یرغمال بنالیا تھا جنہیں جرگے کے کہنے پر رہا کیا گیا۔
دوسری جانب انسپکٹر جنرل آف پولیس (آئی جی) خیبر پختونخوا معظم جاہ انصاری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ یہ تاثر درست نہیں کہ صوبے میں طالبان نے قدم جما لیے ہیں،سوات میں گزشتہ دو دنوں میں افغانستان سے پہاڑوں پر لوگوں کی نقل و حرکت دیکھی گئی تھی۔انہوں نے بتایا کہ پولیس سمیت باقی ادارے چیک کرنے کے وہاں گئے تھے ،جہاں فائرنگ کا تبادلہ ہواجس کے نتیجے میں ایک پولیس افسر معمولی زخمی جب کہ کئی دہشت گرد بھی زخمی ہوئے۔

یہ بھی دیکھیں

سرکاری ملازمین پر حملہ، علیم خان کے سیکیورٹی اسٹاف پر مقدمہ درج

لاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے منحرف رہنما علیم خان کے سیکیورٹی اسٹاف …