ہفتہ , 1 اکتوبر 2022

جارح سعودی اتحاد کا ایک بار پھر امن معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے یمن پر حملہ کردیا

صنعا:المسیرہ ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق، سعودی اتحاد نے ہفتے کی رات یمن کے مارب، تعز، جوف، صعدہ، الحدیدہ، ضالع، البیضا، حجہ اور اقوام متحدہ کے جنگ بندی والے علاقوں میں جاسوسی پروازیں انجام دیں جو جنگ بندی معاہدے کی کھلی خلاف ورزی ہے۔رپورٹ کے مطابق، ان مسلح ڈرون طیاروں نے صوبہ الحدیدہ میں واقع فوج اورعوامی رضاکار فورس کے مراکز کے علاوہ رہائشی علاقوں کو بھی بمباری کا نشانہ بنایا۔

سعودی اتحاد نے الحدیدہ، تعز، مارب، حجہ، صعدہ، جیزان، ضالع اور نجران میں بھی عام شہریوں کے مکانات اور فوجی مراکز پر بھاری گولہ باری کی ہے۔ یہ ایسی حالت میں ہے کہ یمن کے امور میں اقوام متحدہ کے خصوصی مندوب ہانس گرونڈبرگ نے تقریبا ایک مہینے قبل دو مہینے کیلئے جنگ بندی کا اعلان کیا تھا۔

گرونڈبرگ نے دعوی کیا تھا کہ یہ جنگ بندی وسیع تر امن معاہدے کا پیش خیمہ ثابت ہوگی ۔ اس سے قبل یمن کی اعلی سیاسی کونسل کے سربراہ مہدی المشاط نے بھی زور دیکر کہا تھا کہ سعودی اتحاد نے یمن میں جنگ بندی کی مسلسل خلاف ورزی کرکے اسے ختم کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

جوہری معاہدے پر سمجھوتہ ممکن بشرطیکہ امریکہ نیک نیتی کا مظاہرہ کرے،ایران

تہران:ایران کے صدر نے کہا کہ جوہری معاہدے پر سمجھوتہ ممکن ہے بشرطیکہ امریکہ نیک …