بدھ , 5 اکتوبر 2022

خطے میں صیہونیوں کی موجودگی کو برداشت نہیں کریں گے۔جنرل باقری

تہران: ایرانی مسلح افواج کے چیف آف اسٹاف نے کہا ہے کہ بعض علاقائی ممالک ناجائز صیہونی ریاست کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے میں خطے کی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں اور صیہونیوں کی امریکی سینٹرل کمانڈ  میں شمولیت کو برداشت نہیں کریں گے جس سے ایران کو بعض خطرات لاحق ہیں ۔ جنرل محمد باقری نے اتوار کے روز ایرانی بحریہ کے پلانٹس میں سطحی اور زیر زمین جنگی سازوسامان کی تعیناتی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔انہوں نے کہا کہ ایران جاسوسی نیٹ ورک کی اس طرح کی ترقی اور خطے میں خطرہ پیدا کرنے کو برداشت نہیں کر سکتا اور ہم ایرانی عوام کے حقوق اور سمندروں اور اپنی زمین کی سلامتی کے حوالے سے کوئی رعایت نہیں کریں گے۔

جنرل باقری نے کہا کہ پابندیوں کے تحت دفاعی صنعت میں ملک کی نمایاں پیش رفت کی جاتی ہے۔انہوں نے آبنائے ہرمز، بحیرہ عمان، بحر ہند، باب المندب اور بحیرہ احمر کو محفوظ بنانے میں ایرانی بحریہ کے کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ دفاع مقدس کے دوران ہم نے اپنی بحری تنصیبات، تیل کے پلیٹ فارمز، ساحلوں اور جزیروں کا دفاع کیا، لیکن آج ہماری طاقت کو دیکھ کر دشمنوں نے ہمارے علاقے سے اپنی بحریہ کے اہم حصے واپس لے لیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق، تقریب کے دوران، بحریہ کے صنعتی یونٹس کی طرف سے بہتر کیے گئے چار جہازوں کو دوبارہ شامل کیا گیا اور ایک نئے پلانٹ کا آغاز کیا گیا۔

یہ بھی دیکھیں

کراچی: نامعلوم ملزمان کی رینجرز اہلکاروں پر فائرنگ

کراچی: کے علاقے کوہی گوٹھ میں نامعلوم مسلح ملزمان نے فائرنگ کرکے ( Rangers ) …