جمعرات , 6 اکتوبر 2022

چین میں 150 بِلیاں چُرانے والے گروہ کے کارندے گرفتار

بیجنگ: چین میں بِلیاں چوری کرنے والے گروہ کے کارندوں کو 150 بِلیاں چرانے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا۔ گروہ چڑیاؤں کا استعمال کرتے ہوئے بلیوں کو چرایا کرتے تھے تاکہ ان کا گوشت فروخت کرسکیں۔

جانوروں کے حقوق کے عالمی ادارے کے مطابق شینڈونگ صوبے کے جِنان شہر کی پولیس نے سات پنجروں میں قید 148 بلیوں سمیت 31 چڑیائیں بازیاب کیں۔

جانوروں کے تحفظ کے لیے کام کرنے والے گروپ کا کہنا تھا کہ بازیاب کرائی جانے والی بلیوں میں متعدد لاغر تھیں اور کراہ رہی تھیں۔ ریسکیو آپریشن مکمل ہونے کے بعد قید بلیوں نے دو بچوں کو جنم دیا۔
گوشت کی فروخت کے لیے گروہ کا ہدف گھر کی پالتو بِلیاں ہوتی تھیں جن کی غذا اور دیکھ بھال بہتر ہوتی تھی۔

مقامی پولیس نے ایسی موپیڈز(ایک قسم کی چھوٹی موٹر سائیکل) بھی دریافت کیں جن پر پنجرے نصب تھے اور گروہ ان کو بِلیاں جمع کرنے کے لیے استعمال کرتے تھے۔

پولیس کے مطابق ملزمان ایک رموٹ کنٹرول شکنجے میں لگے تار کے بیگ میں پھڑپھڑاتی اور چہچہاتی چڑیا کی مدد سے بلیوں کو پکڑا کرتے تھے۔

جانوروں کے تحفظ کے لیے کام کرنے والے گروپ کے ایک ممبر کا کہنا تھا کہ ان بِلیاں چرانے والوں اور ان کی تجارت کرنے والوں کا کافی عرصے سے پیچھا کر رہے تھے اور بالآخر وہ جگہ ملی جہاں یہ بلیوں کو چرا کر جمع کیا کرتے تھے۔ ان لاچار بِلیوں کو زنگ آلود پنجروں میں تنگی کے ساتھ رکھا جاتا اور جنوبی چین میں مارنے کے لیے بھیج دیا جاتا۔

یہ بھی دیکھیں

یونی سائیکل پر 68 کلو وزنی باربیل اٹھانے کا عالمی ریکارڈ

ایڈن برگ: ایک اسکاٹش ایتھلیٹ نے یونی سائیکل(ایک پہیے والی سائیکل) پر سوار ہو کر …