بدھ , 28 ستمبر 2022

موجودہ مسائل سے نکلنے کا واحد راستہ مزاحمت ہے، زینت ابراہیم زکزاکی

ابوجا: نائیجیریا کے شیعہ رہنما شیخ ابراہیم زکزاکی کی اہلیہ زینت ابراہیم زکزاکی نے دارالحکومت ابوجا کے ایک اسکول میں نائجیریا کے مسلمان طلباء اور نوجوانوں کے ایک گروپ کے ساتھ ایک مخلصانہ ملاقات میں شرکت کی۔

اپنے خطاب کے آغاز میں انہوں نے تعلیم کی بنیاد کی تشکیل میں خاندان کے کلیدی کردار کا تذکرہ کیا اور کہا کہ خاندان بچوں کی تعلیم میں بنیادی اور کلیدی کردار ادا کرتا ہے گھر کا ماحول اچھا ہوا کیوں کہ بچے اس سے سب سے زیادہ اثر و رسوخ حاصل کرتے ہے۔ اس لیے خاندانوں خصوصاً ماؤں کو چاہیے کہ وہ صحیح اور دینی طریقوں کو استعمال کرتے ہوئے اسلامی تعلیم کی بنیاد ڈالنے کی کوشش کریں۔

زینت ابراہیم زکزاکی نے لفظ مزاحمت اور ایثار و قربانی کے کلچر کی طرف بھی اشارہ کیا اور تاکید کی: نائیجیریا میں شیعوں اور مسلمانوں کے ساتھ پیش آنے والے مشکل سالوں میں ہمارے بہت سے جوان ایمان اور اسلام کی راہ میں شہید ہوئے اور میرا یقین ہے کہ یہ شہداء اور مزاحمتی نائیجیریا کے دیگر شہداء ان باپوں اور ماؤں کی اسلامی پرورش کا نتیجہ ہیں جنہوں نے زندگی بھر محنت اور عفت کے ساتھ سچائی اور نجات کا راستہ تلاش کیا اور میں آپ کو یہ بھی بتاتا ہوں کہ قربانی اور مزاحمت کے کلچر کو فروغ دینا ہی واحد راستہ ہے موجودہ مسائل اور گھٹن سے نکلنے اور اس سے نجات کا راستہ ہے ۔

آخر میں زینت ابراہیم زکزاکی نے شیخ زکزاکی کے الفاظ کے کچھ حصوں کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: ہمیں اس میں کوئی شک نہیں کہ ملک اس وقت جن آفات اور مصیبتوں سے دوچار ہے وہ اس خون کا نتیجہ ہے جو ہم سے ناحق بہایا گیا، اور اسلامی تحریک کے قیام کی پوری تاریخ میں شہداء اور سابق فوجیوں کے اہل خانہ کے دل جل رہے ہیں، اس لیے میں کئی شہیدوں کی ماں ہونے کے ناطے اور کسی کو جو شروع سے لے کر اب تک آپ کے شانہ بشانہ رہا ہے، اور انشاء اللہ، میں چاہتا ہوں کہ آپ میں سے ہر ایک کھڑا رہے اور شیخ زکزاکی کی قیادت میں اسلامی تحریک کے راستے میں آخری فتح حاصل کرنے میں اس کی مدد کرے ۔

یہ بھی دیکھیں

امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشترکہ فوجی مشقیں شروع

واشنگٹں:امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشترکہ فوجی مشقیں شروع ہوگئی ہیں۔جنوبی کوریا کی بحریہ نے …