اتوار , 25 ستمبر 2022

دہشت گردی کا مقدمہ؛ عمران خان ایک بار پھر جے آئی ٹی کے سامنے پیش نہ ہوئے

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چئیرمین عمران خان انسداد دہشت گردی کے تحت درج مقدمے میں دوسرے طلبی نوٹس پر بھی جے آئی ٹی کے سامنے پیش نہ ہوئے۔

اس ضمن میں بتایا گیا کہ جے آئی ٹی کے سربراہ ایس پی تفتیشی ونگ رخسار مہدی اور پوری ٹیم سابق وزیراعظم کا انتظار کرتے رہ گئے۔ پولیس نے بتایا کہ چیئرمین پی ٹی آئی نے پہلے طلبی نوٹس پر اپنے وکیل کے ذریعے بیان بھجوایا تھا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ قانون کے مطابق ملزم کوخود شامل تفتیش ہونا پڑتا جبکہ عمران خان نے اپنے وکیل کے ذریعے انہیں بیان جمع کرایا تھا۔
مزیدپڑھیں: دہشت گردی کا مقدمہ؛ عمران خان نے جے آئی ٹی کو اپنا بیان جمع کرادیا

خیال رہے کہ 10 ستمبر کو عمران خان نے جے آئی ٹی کو جمع کروائے گئے بیان میں کہا تھا کہ امپورٹڈحکومت نے سیاسی مخالفت کی وجہ سے شہباز گل کوگرفتار کرکے تشدد کانشانہ بنایا گیا، تحریک انصاف کی احتجاج کی کال پرمیں نے پرامن شرکت کی۔

عمران خان نے اپنے بیان میں مزید کہا تھا کہ جو کچھ تقریر میں کہانہ تو دہشت گردی کے زمرے میں آتاہے نہ ہی میرا کہنے کا ایسا مقصد تھا، پولیس نے امپورٹڈ حکومت کے پریشر میں آکر نہ صرف پی ٹی آئی کارکنوں بلکہ عام شہریوں پر بھی بے شمارجھوٹے مقدمات درج کیے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

PTI پارٹی رہنما حامد خان کا فواد چوہدری کے حوالے سے بڑا انکشاف

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے بانی رکن حامد خان نے پارٹی رہنما اور پی …