پیر , 3 اکتوبر 2022

دیوی کو خوش کرنے کے لیے بھارتی کسان نے اپنی زبان کاٹ لی

نئی دہلی : بھارتی کسان نے دیوی کو خوش کرنے کے لیے اپنی زبان کاٹ لی، پولیس کے مطابق یہ واقعہ بھارت کے شہر نئی دہلی میں پیش آیا اور کسان کی حالت تشویشناک ہے۔

نجی اخبار میں شائع غیر ملکی خبر رساں ادارے ‘اے ایف پی’ کی رپورٹ کے مطابق بھارت کی شمالی ریاست اترپردیش کے مشہور مندرمیں 40 سالہ کسان نے چھری سے اپنی زبان کاٹ لی تھی جس کے بعد وہاں موجود ہجوم میں خوف و ہراس پھیل گیا۔

تفتیشی افسر ابھیلاش تیواری کا کہنا تھا کہ کسان اور اس کی بیوی نے اس سے قبل مذہبی رسومات کیں جس کے بعد انہوں نے چھری سے اپنی زبان کاٹی اور مندر کے دروازے پر رکھ دی۔

تحقیقاتی افسرکا کہنا تھا کہ ‘مندر میں تعینات ہمارے افسران نے دوسرے عبادت گزاروں کی مدد سے اسے ہسپتال پہنچایا۔’

تحقیقاتی افسر نے بتایا کہ اُن کی بیوی کا کہنا تھا کہ ‘میرے شوہر نے دیوی کو خوش کرنے کے لیے اپنی زبان کی ‘قربانی’ دی ہے’ تاہم وہ وضاحت نہیں کر سکیں کہ ان کے شوہر نے ایسا کیوں کیا۔

بھارت کی آبادی کا ایک بڑا طبقہ توہم پرست عقائد پر یقین رکھنا ہے، شہری اپنے خداؤں یا دیوی دیوتاؤں کو خوش کرنے کے لیے جسمانی اعضا کو نقصان پہنچاتے ہیں اور بعض اوقات ’انسانی جان تک کی قربانی دے دیتے ہیں، اسی طرح کچھ لوگ دیوتاؤں کو خوش کرنے کے لیے عجیب و غریب حرکتیں بھی کرتے ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال بھی بھارت کی دو ریاستوں میں اس طرح کے 2 واقعات رپورٹ ہوئے تھے، جب دو نوجوانوں نے اپنے دیوتاؤں کو خوش کرنے کے لیے اپنی زبانیں کاٹ لی تھیں۔

سال 2020 میں ایک ہندو پجاری نے مقامی کسان کا سَر قلم کرکے اپنے دیوتا کے سامنے پیش کردیا تھا، پجاری نے دعویٰ کیا تھا کہ انہیں خواب میں دیوی نے ایسا کرنے کے لیے کہا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

فیصل آباد:ماں اور بیٹا 18 کلو منشیات اسمگل کرنے کی کوشش میں گرفتار

فیصل آباد: موٹروے پولیس نے ایم فور میں کارروائی کرتے ہوئے ماں اور بیٹے کو …