بدھ , 5 اکتوبر 2022

روس سے آخری دم تک لڑیں گے: صدر یوکرئن

کیف:یوکرائن کے صدر ولودومیر زیلینسکی نے دعوی کیا ہے کہ روس سے جاری جنگ میں یوکرائن نے 6 ہزار مربع کلومیٹر علاقے کا کنٹرول دوبارہ حاصل کرلیا ہے۔ غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق یوکرینی صدر نے اپنے خطاب میں کہا ہے کہ رواں ماہ جوابی کارروائیوں میں مشرق اور جنوب میں کئی علاقے واپس حاصل کیے۔ اس کے علاوہ غیر ملکی خبررساں ایجنسی کا کہنا ہے کہ یوکرائن نے شمال مشرقی خارکیف ریجن میں پیش قدمی کا دعوی کیا ہے جس میں خارکیف کے ازیوم، کپیانسک، بلاکلیا سمیت کئی شہر شامل ہیں۔

دوسری جانب امریکی تھنک ٹینک نے کہا یوکرین نے جنگ کا رخ اپنے حق میں موڑ دیا ہے، یوکرین کی حالیہ جوابی کارروائیوں سے جنگ ختم نہیں ہوگی۔ یوکرین نے کہا کہ وہ فوجی سرگرمیوں کو کم کرنے کے روسی دعووں پر بھروسہ نہیں کر سکتے ہیں کیونکہ روس مزید جنگ کی تیاری کر رہا ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق یوکرینی صدر ولودیمیر زیلنسکی نے جاری ویڈیو پیغام میں روس کی فوجی سرگرمیوں کو کم کرنے کے دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس بات کو نہیں مانتے کہ روسی افواج یوکرین کی جانب سرگرمیاں کم کررہی ہے بلکہ روس مشرقی ڈونباس کے علاقے پر حملہ کرنے کے لیے دوبارہ تیاری کر رہا ہے۔ وہ روس پر کبھی بھروسہ نہیں کریں گے اور مشرقی ڈونباس پر کبھی حملہ نہیں کرنے دیں گے۔ مزید کہا کہ ہم اس جنگ کو آخری دم تک لڑیں گے۔

 

یہ بھی دیکھیں

امریکا میں وسط مدتی انتخابات، غیر ملکی مداخلت کا خطرہ

واشنگٹن:امریکا میں آئندہ ماہ ہونے والے وسط مدتی انتخابات میں ووٹرز پر مخالف ممالک کے …