ہفتہ , 1 اکتوبر 2022

چین؛ سرکاری ٹیلی کام کمپنی کی فلک بوس عمارت میں خوفناک آگ بھڑک اُٹھی

بیجنگ: چین کے وسطی شہر چانگشا میں 42 منزلہ فلک بوس عمارت میں اچانک آگ بھڑک اٹھی جس میں سرکاری ٹیلی کام کمپنی کا دفتر بھی ہے۔چین کے سرکاری نشریاتی ادارے ’’سی سی ٹی وی‘‘ کے مطابق چانگشا کی تقریباً 715 فٹ بلند عمارت میں لگی خوفناک آگ کو بجھانے کے لیے 63 فائر فائٹر گاڑیوں اور 2 ہزار رضاکاروں کو بھیجا گیا ہے جنھوں گھنٹوں کی جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پالیا۔

خوفناک آگ نے 42 منزلہ فلک بوس عمارت کو مخدوش کردیا جس میں دو زیر زمین فلورز بھی تھے اور مبینہ طور پر کہا جا رہا ہے کہ اسی مقام پر ایندھن ذخیرہ کیا گیا تھا جس کے پھٹنے سے آگ لگی تاہم اس بات کی تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیوز میں دیکھا جا سکتا ہے کہ آگ کے بلند شعلوں نے 42 منزلہ عمارت کے اکثر فلورز کو اپنی لپیٹ میں لیا ہوا ہے اور فائر فائٹرز آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

سرکاری سطح پر آتشزدگی کے واقعے میں جانی نقصان کی تصدیق نہیں کی گئی تاہم ہلاکتوں کی کا خدشہ ہے۔ فلک بوس عمارت کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ڈھائی کروڑ افغان شہریوں کو فوری امداد کی ضرورت ہے: اقوام متحدہ

کابل:افغانستان میں اقوام متحدہ کی انسان دوستانہ امداد کے کوآرڈینیٹر ادارے نے ڈھائی کروڑ کے …