منگل , 27 ستمبر 2022

پاک افغان سرحد کے قریب داعش کے 3 دہشتگرد ہلاک

پشاور: حکام نے بتایا کہ کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) نے خیبر پختونخواہ میں پاکستان-افغان سرحد کے قریب داعش سے تعلق رکھنے والے 3 دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سی ٹی ڈی پشاور ریجن کے حکام کو ذرائع سے دہشت گردوں کے ایک منظم گروپ کی موجودگی کی اطلاع ملی جو افغان سرحد کے قریب جمرود کے علاقے میں دہشت گردی کا بڑا منصوبہ بنا رہے تھے۔

اطلاع کی تصدیق کے بعد سی ٹی ڈی کی خصوصی ٹیموں نے مذکورہ علاقے میں چھاپہ مارا۔ سی ٹی ڈی کی ٹیم جیسے ہی ان کے ٹھکانے پر پہنچی تو دہشت گردوں نے سی ٹی ڈی اہلکاروں پر فائرنگ شروع کر دی۔جس کے نتیجے میں سی ٹی ڈی اہلکاروں نے اپنے دفاع کے لیے دہشت گردوں پر جوابی فائرنگ شروع کر دی۔

فائرنگ کا تبادلہ کچھ دیر تک جاری رہا اور فائرنگ رکنے کے بعد سرچ اینڈ کلیئرنس آپریشن کے دوران 3 دہشت گردوں کی لاشیں نکال لی گئیں۔

حکام کے مطابق مارے گئے دہشت گردوں کی شناخت ذاکر اللہ عرف حذیفہ اور مرسلہ خان عرف قاری عرف ارشاد ولد سید اکبر کے نام سے ہوئی جبکہ تیسرے دہشت گرد کی شناخت کی جا رہی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ دہشت گردوں کے قبضے سے تین کلاشنکوف، 12 میگزین، دو دستی بم، تین بینڈولیئر اور درجنوں کارتوس برآمد ہوئے ہیں۔ دو سے تین دہشت گرد اندھیرے کا فائدہ اٹھا کر فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے۔فرار ہونے میں کامیاب دہشت گردوں کی گرفتاری کے لیے سرچ آپریشن جاری ہے۔

یہ بھی دیکھیں

حکومت کا پی ٹی آئی لانگ مارچ روکنے کیلیے 40 ہزار آنسو گیس شیل کی خریداری

اسلام آباد پولیس نے تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے ممکنہ لانگ مارچ کے شرکا …