منگل , 27 ستمبر 2022

اسرائیل نے ابو عاقلہ کو دانستہ قتل کیا:فلسطینی- برطانوی تحقیقات

لندن:بین الاقوامی فوجداری عدالت میں جمع کرائی گئی فلسطینی-برطانوی تحقیقات میں یہ نتیجہ اخذ کیا گیا ہے کہ قابض فوج نے جان بوجھ کرالجزیرہ ٹی وی چینل کی نامہ نگار شیرین ابو عاقلہ کو قتل کیا۔

مشترکہ تحقیقات فلسطینی الحق فاؤنڈیشن اور برطانوی فرانزک آرکیٹیکچر نے کی تھی اور مؤخر الذکرکا کہنا ہے کہ یہ لندن میں قائم ایک تحقیقی ادارہ ہے، جو انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی تحقیقات کے لیے کام ہے، جس میں ریاستوں، پولیس فورسز، فوجوں اور تشدد کے واقعات شامل ہیں۔ کمپنیاں، تحقیقی دستاویزی اور فیلڈ انٹرویوز کے علاوہ مقامی اور تعمیراتی تجزیہ میں جدید تکنیکوں کا استعمال کرتی ہیں۔

الحق فاؤنڈیشن کے ڈائریکٹر شعوان جبارین نے کہا کہ ایک دستاویزی سائنسی مطالعہ نے اعلانیہ نتیجہ اخذ کیا جو یہ ہے کہ یہ قتل قابض فوج کی طرف سے منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا تھا۔

جبارین نے مزید کہا کہ فرانزک آرکیٹیکچر میں تحقیقاتی انجینیرنگ یونٹ کے ذریعےہم نے میدان میں حقیقت کا مطالعہ کیا اور تمام دستاویزات، تمام فوٹو گرافی کے مواد کو جمع کرنے میں ہمیں کئی دن لگے۔ہم نے فضا سے اس جگہ کی تصویر کشی بھی کی۔

جبارین نے کہا کہ انہوں نے بہت سے کیمرے نصب کیے ہیں تاکہ سب سے چھوٹی تفصیلات کو پکڑنے میں آسانی ہو۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے انہیں ایک مخصوص سائنسی انداز میں رکھا اور ان کا مطالعہ کیا۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ مطالعہ ختم نہیں ہوا تھا لیکن اہم ابتدائی نتائج اب دی ہیگ میں نشر کیے گئے ہیں۔ پریس کانفرنس کا حوالہ دیتے ہوئے جب وکلاء نے ابو عاقلہ کی فائل انٹرنیشنل کریمنل کورٹ کے پبلک پراسیکیوشن آفس کے حوالے کی تھی۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے سروے انجینیرنگ کے اہم نتائج کو برطانوی فاؤنڈیشن کے آرکیٹیکچرل سروے کے ساتھ دستاویز کیا۔”

انہوں نے کہا کہ قتل پہلے سے طےشدہ منصوبہ تھا اور شیرین اسرائیلی فوجی فوج کے ہدف کی حد اور نظر کی حد میں تھی۔

 

یہ بھی دیکھیں

پاک فوج کا ہیلی کاپٹر بلوچستان میں گر کر تباہ، 6 اہلکار شہید

کوئٹہ:پاک فوج کے شعبۂ تعلقاتِ عامہ (آئی ایس پی آر) نے بتایا ہے کہ پاک …