ہفتہ , 26 نومبر 2022

میانمار کی فوجی عدالت نے جاپان کے صحافی کو 10 سال قید سنا دی

میانمار: میانمار کی فوجی عدالت نے قانون شکنی کے الزام میں جاپان کے صحافی “طورو کوبوٹا” کو 10 سال قید کی سزا سنادی ہے۔بین الاقوامی میڈیاکے مطابق جاپانی صحافی طورو کبوٹا سمیت اب تک 5 غیر ملکی صحافیوں کو گرفتار کیا گیا جن میں سے بیشتر کو رہائی دے دی گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق میانمار کی فوجی عدالت نے قوانین کی خلاف وزری پر ڈاکیومنٹری شوٹ کرنے والے جاپانی صحافی کو دس سال قید کی سزا سنائی۔عدالت نے احتجاج کرنے کے جرم میں 3 سال اور اور قانون شکنی پر 7 سال قید کی سزا سنائی۔

جاپانی وزارت داخلہ نے میانمار کی فوجی عدالت کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ کبوتا کی جلد رہائی کیلئے کوشان ہیں۔واضح رہے کے جاپان کی طرف سے ہمشہ میانمار کی مدد و معاونت کی جاتی رہی ہے، ملک کی موجودہ مقتدرہ طاقتوں کے ساتھ جاپانکے قریبی روابط ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

روس کیخلاف پابندیوں کا 9واں پیکج تیار کر رہے ہیں:یورپی یونین کمیشن

کیف:روس کے ساتھ قیدیوں کے تبادلے میں یوکرائن کے 50 فوجیوں کو رہا کر دیا …