جمعرات , 1 دسمبر 2022

تہران:شیراز میں دہشتگردوں کے حملے کا جواب ضرور دیا جائے گا، ایرانی صدر

تہران:ایران کے صدر نے شیراز میں حضرت شاہ چراغ کے مزار پر دہشتگردی کے واقعے پر دکھ کا اظہار کیا اور شدید غم و غصے کے ساتھ حملے کی مذمت کرتے ہوئے منصوبہ سازوں کو سنگین نتائج کا انتہاہ دیا۔ ایران کے صدر آیت اللہ رئیسی نے آج شام مغرب کے وقت صوبہ فارس کے شہر شیراز میں ہونے دہشتگردی کے واقعے پر شدید دکھ کا اظہار کیا اور شہداء کے لواحقین کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا اور واقعے میں ملوث عناصر اور منصوبہ سازوں کو کیفر کردار تک پہنچانے کے عزم کا اظہار کیا۔

آیت اللہ رئیسی نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ ایرانی قوم کی مظلومیت اور طاقت کی صدا اس بار حضرت احمد بن موسیٰ علیہ السلام کے روضہ مبارک میں گونجی اور انقلاب اسلامی ایران کے دشمنوں کے جرائم کی سیاہ فہرست میں ایک اور جرم کا اضافہ ہوا۔

میں اس دہشت گردانہ حملے میں حضرت احمد بن موسیٰ علیہ السلام کے روضہ مبارک کے زائرین کی ایک تعداد کی شہادت اور زخمی ہونے پر ان عزیزوں کے اہل خانہ اور تمام ایرانی عوام سے تعزیت کا اظہار کرتا ہوں۔

تجربہ بتاتا ہے کہ ایران کے دشمن قوم کی متحد صفوں میں اور ملک کی ترقی میں رخنہ ڈالنے میں اپنی بے بسی، مایوسی اور اپنے تیروں کے خطا پر لگنے کا بدلہ تشدد اور دہشت گردی سے لیتے ہیں۔

یہ شرارت یقینی طور پر بغیر جواب نہیں رہے گی اور سیکیورٹی اور قانون نافذ کرنے والے ادارے اس اندھے جرم کے پیچھے موجود کرداروں کا پتہ لگا کر اس کا حکم دینے والوں اور منصوبہ سازوں کو ندامت پر مجبور کردینے والا اور عبرتناک جواب دیں گے۔

یہ بھی دیکھیں

روس۔ یوکرین جنگ میں استعمال ہونے والا اسلحہ برّاعظم افریقہ میں داخل ہو رہا ہے:نائیجیریا

ابوجا:نائیجیریا کے صدر محمد بخاری نے کہا ہے کہ روس۔یوکرین جنگ میں استعمال کیا جانے …