جمعرات , 1 دسمبر 2022

اسرائیل کا "عرین الاسود”کے کمانڈر کو کو قتل کرنے کے لیے پیگاسس جاسوسی سافٹ ویئر کا استعمال

یروشلم:ایک صہیونی میڈیا نے نابلس میں عسکریت پسند گروپ "آرین السعود” کے کمانڈر کو قتل کرنے کے لیے صیہونی غاصب حکومت کی جانب سے جاسوسی سافٹ ویئر "پیگاسس” کے استعمال کا انکشاف کیا ہے۔

بدھ کو تقریب خبر رسان ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق صہیونی اخبار یدیعوت احرونوت نے انکشاف کیا ہے کہ قابض حکومت کی جاسوسی ایجنسی نے منگل کی صبح نابلس کے پرانے قصبے میں واقع "عرین الاسود”گروپ کے مزاحمتی جنگجوؤں کی 8200 یونٹ کے ذریعے شناخت کے لئے پیگاسس جاسوس کو استعمال کیا۔

منگل کی صبح فلسطینی وزارت صحت نے چھ فلسطینیوں کی شہادت کا اعلان کیا، جن میں حمدی محمد صبری شرف (۳۵ ساله)، حمدی صبیح رمزی قیم (۳۰ ساله )، ودیع صبیح الحوح (۳۱ ساله) از فرماندهان عرین الاسود، علی خالد عمر عنتر (۲۶ ساله)، مشعل زاهی أحمد بغدادی (۲۷ ساله)، قصی محمود التمیمی (۲۰ ساله ) ، قصی محمود التمیمی (20 سال) اور 21 دیگر افراد زخمی ہوئے۔

ان دنوں مقبوضہ علاقوں بالخصوص مغربی کنارے کے حالات بہت خاص ہیں اور فلسطینی جنگجو صیہونیوں کے ان گنت جرائم کا کسی بھی طریقے سے جواب دیتے ہیں اور اس سے غاصب صیہونیوں کے لیے خاص حالات پیدا ہو گئے ہیں۔

اس سے پہلے صیہونی صرف مقبوضہ علاقوں کے جنوب میں اور غزہ کے علاقے میں فلسطینیوں کے ساتھ برسرپیکار تھے لیکن اب فلسطین کے مشرق میں مغربی کنارہ بزدل صیہونیوں کے لیے چھپنے کی جگہ بن چکا ہے جس کی وجہ سے اس کے نوجوانوں کو شہید کر دیا گیا ہے۔ مسلح، اور اس نے انہیں رات کی اچھی نیند سے محروم کر دیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

نئے آرمی چیف کی تعیناتی پاکستان کا اندرونی معاملہ ہے: امریکا

واشنگٹن: امریکی محکمہ خارجہ نے کہا ہے کہ نئے آرمی چیف کی تعیناتی پاکستان کا …