منگل , 6 دسمبر 2022

قطر؛ فٹبال ورلڈکپ کی مشقوں میں کرین گرنے سے 3 پاکستانی جاں بحق

دوحہ: قطر میں ہونے والے فٹبال ورلڈ کپ کی تیاریوں کے سلسلے میں جاری مشقوں کے دوران کرین گرنے سے 3 پاکستانی فائر فائٹرز جاں بحق ہوگئے۔
عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق قطر کے دارالحکومت دوحہ کی بندرگاہ حماد پر فٹبال ورلڈ کپ کے حوالے سے اسٹیڈیم پر فضائی یا کیمیکل حملے کی صورت میں اس سے نمٹنے کے لیے سیکیورٹی اہلکاروں کی مشقیں جا رہی تھیں۔

ان مشقوں میں سعودی عرب، فلسطین، ترکی، امریکا، برطانیہ، فرانس اور جرمنی کے سیکیورٹی اہلکار حصہ لے رہے تھے۔ مشقوں کے دوران ایک کرین قریب کھڑے فائر فائٹرز پر گر گئی جو مشق دیکھ رہے ہیں۔

اس حادثے میں تینوں فائر فائٹرز موقع پر جاں بحق ہوگئے۔ مقامی حکام نے ’’اے ایف پی‘‘ کو بتایا کہ تینوں کا تعلق پاکستان سے ہے اور یہ تینوں مشقوں میں شریک بھی نہیں تھے۔

یہ حادثہ بدھ کے روز پیش آیا تاہم تفصیلات جاں بحق ہونے والے پاکستانی فائر فائٹرز کے دوستوں کی سوشل میڈیا پوسٹوں سے سامنے آرہی ہیں۔ سوشل میڈیا سے ہی پتہ چلا کہ ان کے نام یوسف میندار، کلیم اللہ اور جلال ہیں۔

سوشل میڈیا پر وائرل پوسٹوں کے مطابق ان میں سے یوسف میندار نے اہل خانہ سمیت تمام زندگی خلیجی ریاستوں میں گزاری ہے جب کہ بقیہ دو کے اہل خانہ پاکستان میں مقیم ہیں۔قطر نے اس حادثے پر تاحال کوئی تبصرہ نہیں کیا۔

خیال رہے کہ قطر میں 20 نومبر سے 18 دسمبر تک جاری رہنے والے فٹبال ورلڈ کپ میں سیکیورٹی کے فرائض کی انجام دہی کے لیے پاک فوج کا دستہ بھی بھیجا گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایشیاکپ کسی نیوٹرل جگہ پر کروایا گیا تو ہم بھی شرکت نہیں کریں گے، رمیز راجہ

راولپنڈی: چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) رمیزراجہ کا کہنا ہے کہ ایشیاکپ کیلئے …