بدھ , 7 دسمبر 2022

حکومت 30 نومبر تک گنا قیمت مقرر، کرشنگ سیزن شروع کرائے، سندھ ہائیکورٹ

کراچی: سندھ ہائیکورٹ نے صوبائی حکومت کو 30 نومبر تک گنے کی فی من قیمت مقرر کرنے اور شوگر ملز چلاکر کرشنگ سیزن شروع کرنیکا حکم دیدیا۔

چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کی سربراہی میں دو رکنی بنیچ کے روبرو گنے کی فی من قیمت مقرر کرنے اور شوگر ملز چلانے سے متعلق درخواست پر سماعت ہوئی۔ کین کمشنر عدالت میں پیش ہوئے اور بتایا کہ مل مالکان اور آبادگاروں کے ساتھ ایک اجلاس ہوچکا ہے اور دوسرا 10 نومبر کو ہوگا۔

عدالت عالیہ نے 30 نومبر کی حتمی تاریخ دیتے ہوئے حکم دیا کہ بہرصورت فی من گنے کی قیمت مقرر کرنے کے ساتھ 30 نومبر کو ہی شوگر ملز چلائیں۔

عدالت نے حکم جاری کرتے ہوئے سماعت غیرمعینہ مدت کے لیے ملتوی کردی۔ درخواست گزار کے وکیل نے موقف اپنایا کہ سیزن یکم اکتوبر سے شروع ہوچکا ہے مگر قیمت تاحال مقرر نہیں کی گئی۔ سندھ میں سیلاب کی وجہ سے فصلیں مکمل تباہ ہوچکی ہیں۔ خاص طور پر چاول، مکئی کی فصلیں تباہ ہوچکی ہیں۔

کین کمشنر نے کہا کہ معاملات میں کافی پیش رفت ہوچکی ہے، اب بورڈ کی میٹنگ بھی جلد ہوگی جس میں قیمت مقرر کردی جائے گی۔دائر درخواست میں موقف اپنایا گیا تھا کہ گندم کی بوائی سیلاب کا پانی نکلنے کے بعد شروع کی جائے گی۔ گنے کی فصل تیار ہے مگر اس کی قیمت مقرر نہیں کی جارہی ہے نہ ہی شوگر ملز چلانے کا کوئی نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ہے۔

قانون کے مطابق سندھ میں یکم اکتوبر کو شوگر ملز چلانی تھیں لیکن اس سے پہلے گنے کی قیمت مقرر کرنی ہوتی ہے۔ سندھ حکومت کو فوری گنے کی قیمت مقرر کرنے اور شوگر ملز چلانے کا حکم دیا جائے۔

یہ بھی دیکھیں

ملاکنڈ ڈویژن میں ٹیکس کیخلاف تحریک شروع کرنے کا اعلان

سخاکوٹ: تحریک اتحاد قبائل ملاکنڈ نے ملاکنڈ ڈویژن میں ٹیکس نفاذ اور ملاکنڈ لیویز کی …