پیر , 28 نومبر 2022

عراق اور ایران کے درمیان سرحدی پٹی میں حشد الشعبی کے سیکورٹی آپریشن کا آغاز

بغداد:حشد الشعبی فورسز نے دیالہ آپریشن کمانڈ کے ساتھ مل کر ایرانی سرحد کے قریب مشترکہ تلاشی اور سیکورٹی آپریشن شروع کیا۔میجر جنرل هاشم احمد حنتوش التمیمی کی سربراہی میں عراقی پاپولر موبلائزیشن کی 20ویں بریگیڈ کی افواج نے اور دیالہ آپریشن کمانڈ کی ایمرجنسی رجمنٹ کی شرکت کے ساتھ ایک آپریشن کیا۔ "بیکه”، "وادی قصب” کے دیہاتوں اور ان کے درمیان کے دیہاتوں اور قریبی وادیوں میں معائنہ آپریشن شروع کیا۔

یہ آپریشن "داعش” کے دہشت گرد عناصر کی باقیات کا پیچھا کرنے اور دہشت گرد عناصر کی لوٹ مار سے علاقوں کی تلاش اور صفائی کے مقصد سے کیا جاتا ہے۔

اتوار کے روز، حشد الشعبی کے دیالہ آپریشن کے کمانڈر، طالب الموسوی نے اعلان کیا: حشد الشعبی کی فورسز نے داعش کے ٹھکانوں کو تباہ کرنے کے لیے تین محوروں میں آپریشن کیا اور حور الطلب میں داعش کا تعاقب کیا۔

انہوں نے مزید کہا: حشد الشعبی کی پہلی اور چوتھی بریگیڈ کی افواج نے دو محوروں کو ڈھانپ لیا اور حشد الشعبی کی 20ویں بریگیڈ نے تیسرے محور کا احاطہ کیا۔

الموسوی نے کہا: یہ آپریشن مشکل سے قابل رسائی علاقوں تک پہنچنے اور داعش کے ٹھکانوں کو تباہ کرنے کے مقصد سے کیا گیا۔

یہ بھی دیکھیں

بی جے پی کے رکن اسمبلی کی غنڈہ گردی؛ بس اسٹینڈ پر بنے گنبدوں کو ہٹادیا

میسور: کرناٹک میں مودی سرکار کے رکن اسمبلی نے ایک بس اسٹاپ پر بنے اسٹینڈ …