ہفتہ , 10 دسمبر 2022

ہمیں ایران سے نمٹنے کا طریقہ بدلنا چاہیے!فرانسیسی صدر

پیرس:فرانس کے صدر ایمانوئل میکرون،جن کا ملک گزشتہ جوہری معاہدے کے مذاکرات میں "بُری پولیس” کا کردار ادا کر چکا ہے، ویانا میں ایران کی جانب سے حالیہ پابندیوں کے خاتمے کے مذاکرات میں ایک بار پھر تہران کے خلاف بے بنیاد دعوے دہرائے ہیں۔

"الحدث” نیٹ ورک کو انٹرویو دیتے ہوئے میکرون نے دعویٰ کیا کہ ایران کے خطرات مغربی ایشیا کی حدود سے باہر پھیل چکے ہیں،کہا کہ دنیا میں ایران کے خطرات سے نمٹنے کا طریقہ بدلنا چاہیے ۔

اس انٹرویو میں، جو بدھ کو "شرم الشیخ” موسمیاتی کانفرنس کے موقع پر منعقد کیا گیا تھا اور پیر کی شام العربیہ نیٹ ورک پر نشر کیا گیا تھا، اس نے دعویٰ کیا: "ایران کے خطرات سے نمٹنے کے لیے ہمیں منظم طریقے سے کام کرنا چاہیے ۔ ”

فرانسیسی صدر نے پابندیوں کے خلاف ایرانیوں کی حمایت لینے کی غرض سے اشارہ کرتے ہوئے کہا: "ہمیں اس بات کو یقینی بنانا چاہیے کہ ایرانی عوام پابندیوں سے متاثر نہ ہوں۔ ”

دوسری جانب جرمن حکومت کے ترجمان نے پیر کے روز اعلان کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف نئی پابندیوں کے پیکج کے نفاذ کے لیے کام جاری ہے۔

یہ بھی دیکھیں

خلیج، چینی سربراہ کانفرنس میں مسئلہ فلسطین کے دو ریاستی حل پر زور

ریاض:چینی اور خلیجی قیادت نے خلیج، چینی سربراہ کانفرنس برائے تعاون وترقی کے جمعہ کے …