منگل , 6 دسمبر 2022

ترکی میں پانچ افغان مہاجرین کا قتل

انقرہ:انقرہ کے پولیس حکام نے افغانستان کے شہریوں کی 5 لاشیں دریافت کرنے کا اعلان کیا جو التیندگ تارکین وطن کے علاقے میں چاقو کے وار سے ہلاک ہوئے تھے۔ہلاک ہونے والوں کی لاشیں ان کے اہل خانہ کو ان کے لاپتہ ہونے کی اطلاع کے بعد ملی ہیں۔

ابھی تک ان قتلوں کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی ہے اور نہ ہی اس واقعے کے سلسلے میں کسی کو گرفتار کیا گیا ہے۔ترک پولیس حکام نے ان افراد کی شناخت اور ان کی ہلاکت کے صحیح وقت کے بارے میں تفصیلات فراہم کیے بغیر کہا ہے کہ لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لیے فرانزک میڈیسن منتقل کر دیا گیا ہے اور اس حوالے سے تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔

ترکی میں افغان سفارت کاروں نے بھی ان پانچ افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے تاہم ان کی شناخت کے بارے میں تفصیلات فراہم نہیں کیں۔ترکی کے بعض ذرائع ابلاغ نے ترک پولیس حکام کا نام لیے بغیر اطلاع دی ہے کہ یہ افراد غالباً ایک ہفتہ قبل مارے گئے تھے۔

یہ واقعہ ایک محلے میں پیش آیا جہاں بڑی تعداد میں افغان اور شامی مہاجرین رہتے ہیں۔ترکی اس وقت افغانستان سمیت مختلف ممالک سے 40 لاکھ تارکین وطن کی میزبانی کر رہا ہے جو یورپی ممالک میں سیاسی پناہ کی امید میں اس ملک میں داخل ہوئے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

سخت ترین حالات میں نفسِ مطمئنہ کا اظہار کرنے والا شخص امام حسینؑ کا حقیقی پیروکار ہے: علامہ امین شہیدی

بہاولپور:امتِ واحدہ پاکستان کے سربراہ علامہ محمد امین شہیدی نے آئی ایس او بہاولپور کی …