جمعرات , 1 دسمبر 2022

300 سال قدیم پشاورکا منفرد مدرسہ جہاں اساتذہ اور شاگرد سب نابینا ہیں

پشاور:پشاور میں 300 سال قدیم ایک ایسا غیرمعمولی مدرسہ موجود ہے جہاں صرف اساتذہ ہی نہیں بلکہ سارے شاگرد بھی نابینا ہیں اور دینی تعلیم کے حصول میں مصروف ہیں۔

تین صدی قبل قائم ہونے والا مدرسہ طوراقل بائے میں نابینا طالب علموں کی تاریک زندگیوں میں روشنی کی ایک کرن ہے، صرف خیبرپختونخواہی سے ہی نہیں بلکہ ہمسایہ ملک افغانستان سے بھی نابینا افراد حصول علم کیلئے یہاں کا رخ کرتے ہیں۔

اس مدرسے میں حصول علم کےلئے عمرکی کوئی قید نہیں، یہاں سے دینی تعلیم مکمل کرنے کے بعد یہی طلبہ اپنے جیسے نئے آنے والے شاگردوں کیلئے مشعل راہ بنتے ہیں، یہ مدرسہ گزشتہ تین دہائیوں سے ڈھائی ہزارسے زائد نابینا افراد کو دینی تعلیم سے مالا مال کرچکا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

فضائی سفر کے دوران پیسے بچانے ، قطاروں اور تناؤ سے بچنے کا طریقہ

برازیلیا:برازیل سے تعلق رکھنے والی فلائٹ اٹینڈنٹ نے 2022 میں سفر کی بڑھتی ہوئی لاگت …