ہفتہ , 10 دسمبر 2022

طالبان امیر کا افغانستان میں حدود اور قصاص کے معاملات میں شرعی قوانین نافذ کرنے کا حکم

کابل:افغان طالبان کے امیر ملا ہیبت اللہ نے قاضیوں کو حدود اور قصاص کے معاملات پر شرعی شرائط پوری کرکے ان کے شرعی قوانین کی روشنی میں فیصلے کرنے کی ہدایت کردی ہے۔

افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللّٰہ مجاہد نے اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ طالبان کے امیر ہیبت اللہ اخوندزادہ کی سربراہی انصاف کی فراہمی پر مامور قاضیوں کا اجلاس ہوا۔طالبان کے امیر ہیبت اللہ اخوندزادہ نے قاضیوں کا ہدایت کہ چوروں، اغوا کاروں اور باغیوں کے خلاف معاملات کا بغور جائزہ لیں۔

افغان طالبان کے امیر نے ہدایت کہ وہ معاملات جن میں حدود اور قصاص کی تمام شرعی شرائط پوری ہوتی ہیں ، وہاں حدود اور قصاق کے قوانین نافذ کئے جائیں کیونکہ یہی شریعت کا حکم اور میری ہدایات ہیں اور ان پر عمل واجب ہے۔

یہ بھی دیکھیں

یوکرین جنگ، یورپی یونین نے روس کے 19 ارب یورو کے اثاثے منجمد کیے، رپورٹ

برسلز :بیلجیئم اور لکسمبرگ کی قیادت میں یورپی یونین کے ممالک نے یوکرین کے خلاف …