ہفتہ , 10 دسمبر 2022

مسلح افواج کے خلاف مغربی ممالک کے بیانات کی کوئی سیاسی اہمیت نہیں:یمن

صنعا:صنعا میں یمنی قومی وفد کے رکن عبد الملک العجری نے تاکید کی کہ یمن کی مسلح افواج کے خلاف مغربی ممالک کے بیانات کی کوئی سیاسی اہمیت نہیں ہے، انہوں نے اشارہ کیا کہ مغربی ممالک یمن میں طبی سامان اور آلات کے داخلے کو روک رہے ہیں جس کی جنگوں کی تاریخ میں نظیر نہیں ملتی۔

ان کے بقول، اقوام متحدہ بھی امن کے حصول میں اپنی حقیقی تاثیر کھو چکی ہے اور تنازعات کی سرپرستی کرنے والے آلات کا حصہ بن چکی ہے،العجری نے واضح کیا کہ ہماری مسلح افواج نے بحری جہازوں کو یمنی مقبوضہ بندرگاہوں کے قریب آنے کے بارے میں خبردار کیا ہے کہ حقوق کے معاملے پر معاہدہ ہونے تک تیل کی برآمدات روکنا ہوں گی۔

انہوں نے کہا کہ یمنی فوج نے اپنی سرخ لکیروں کا اعلان کر دیا ہے، وہ وقت گزر گیا جب امریکہ، فرانس اور دیگر مغربی ممالک نے خطے اور دنیا میں سرخ لکیریں قائم کیں،انصار اللہ کے رکن نے تاکید کی کہ خطے میں اب امریکہ کی کوئی حیثیت نہیں ہے، ہماری قوم اور خطے کے ممالک کے پاس سرخ لکیریں ہیں، یمن کے معاملے میں تیل سرخ لکیر ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ترک فوجی عراقی کردستان کی سرحدی پٹی پر کیوں تعینات ہوئے؟

بغداد:عراق ذرائع کا کہنا ہے کہ ترک فوجی، عراقی کردستان کے ساتھ ملنے والی سرحدی …