جمعہ , 3 فروری 2023

پی ٹی آئی راولپنڈی میں آج عوامی طاقت کا مظاہرہ کرے گی

راولپنڈی: پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے راولپنڈی میں آج بھرپور عوامی طاقت کا مظاہرہ کیا جائے گا، جس میں شرکت کیلیے ملک بھر سے کارکنان قافلوں کی صورت پہنچنا شروع ہوگئے ہیں۔انتظامیہ کی ہدایت پر پی ٹی آئی نے جلسہ گاہ کا مقام تبدیل کردیا، جس کے بعد اب سکستھ روڈ فلائی اوور پر اسٹیج بنایا گیا جبکہ پنڈال چاندنی چوک تک لگایا گیا ہے۔

ضلعی انتظامیہ نے پاکستان تحریک انصاف کو 26 نکات پر جلسے کی اجازت دے دی ہے جس کے مطابق پی ٹی آئی کو رات بارہ بجے سے پہلے جلسہ گاہ کو خالی کرنا ہوگا۔

جہاں ایک طرف پی ٹی آئی کے جلسے کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں وہیں ابھی تک عمران خان کے ہیلی کاپٹر کی لینڈنگ کا معاملہ حل نہ ہوسکا، جی ایچ کیو کی جانب سے پریڈ گراؤنڈ میں ہیلی کاپٹر اتارنے کی اجازت کے بعد انتظامیہ نے اس سے انکار کردیا۔پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان دوپہر دو بجے زمان پارک سے راولپنڈی کیلیے روانہ ہوں گے۔

دوسری جانب ضلعی انتظامیہ نے پی ٹی آئی قیادت کو تھریٹ الرٹ کے حوالے سے آگاہ کردیا ہے، جس کے تحت پنڈال اور جلسہ گاہ کے اطراف میں فول پروف سیکیورٹی انتظامات کیے گئے ہیں۔

جلسے کی حفاظت کے لیے 7 ہزار سے زائد پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا جائے گا جبکہ بلند مقامات پر اسنائپرز بھی موجود ہوں گے۔پی ٹی آئی قائدین نے واضح کیا ہے کہ عمران خان اور پنڈی مارچ کی سیکیورٹی کی ذمہ داری حکومت کی ہے اگر کچھ ہوا تو اس حکومت اور وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ کو ذمہ دار سمجھا جائے گا۔

تھریٹ الرٹ کے پیش نظر پی ٹی آئی نے بھی سیکیورٹی پلان مرتب کیا ہے جس کے تحت کارکنان کو مرکزی کنٹرینر سے بیس فٹ دور رکھا جائے گا۔اُدھر راولپنڈی کے چاروں بڑے اسپتالوں میں ایمرجنسی بھی نافذ کرتے ہوئے تمام آپریشنز ملتوی اور ڈاکٹرز کی چھٹیاں منسوخ کردی گئیں ہیں۔

بعد ازاں کمشنر راولپنڈی نےبھی وفاقی حکومت کی جانب سے جاری تھریٹ الرٹس کا حوالہ دیتے ہوئے ڈی سی راولپنڈی و سی پی او راولپنڈی کو مراسلہ ارسال کیا جس میں دونوں افسران کو پی ٹی آئی کی مقامی و مرکزی قیادت کو صورتحال سے آگاہ کرکے فول پروف سیکورٹی یقینی بنانے کی ہدایات بھی کی گئی ہے۔

مراسلے میں کہا گیا یے کہ حساس ادارے کی جانب سے خصوصی رپورٹ موصول ہوئی ہے، پاک انگلینڈ کرکٹ سیریز اور پی ٹی آئی دھرنے کا انعقاد ہونے جارہا ہے، جسکے حوالے سے سکیورٹی تھریٹ موجود ہیں، میٹنگز میں بھی سب معاملات پر بات کی گئی تھی، لہذا تھریٹس الرٹ کو مدنظر رکھ کر سخت سیکورٹی انتظامات کیے جائیں۔

اسی طرح فوری طورتھریٹس الرٹ و انفارمشین کو پی ٹی آئی کی مقامی و مرکزی قیادت سے شیئر کیا جائے اور انھیں اپنی حفاظت یقینی بنانے کا کہا جائے۔

مراسلے میں مزید کہا گیا یے تمام متعلقہ اسٹیک ہولڈرز سے اشتراک کرکے فول پروف سیکورٹی اقدمات کو یقینی بنایا جائے تاکہ کسی بھی قسم کے ناخوشگوار واقعہ سے بچا جاسکے۔

اُدھر اسلام آباد انتظامیہ نے دفعہ ایک سو چوالیس میں دو ماہ کی توسیع کا نوٹی فکیشن جاری کردیا جس کے تحت عوامی مقامات پر اسلحے کی نمائش پر پابندی ہوگی۔

یہ بھی دیکھیں

بتایا جائے لاپتا افراد زندہ ہیں مرگئے یا ہوا میں تحلیل ہوگئے؟ عدالت وزارت دفاع پر برہم

اسلام آباد: وزارت دفاع نے کہا ہے کہ لاپتا افراد آئی ایس آئی اور ایم …