جمعہ , 3 فروری 2023

پہلے ٹیسٹ میں پاکستانی باؤلرز بے بس، انگلینڈ کے بغیر کسی نقصان کے 174رنز

راولپنڈی:انگلینڈ کے کپتان بین اسٹوکس نے ٹاس جیت کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی— فوٹو: بشکریہ پی سی بیانگلینڈ نے پاکستان کے خلاف پہلے ٹیسٹ میچ میں اوپنرز کے عمدہ کھیل کی بدولت جارحانہ انداز میں اننگز میچ کا آغاز کرتے ہوئے پہلے دن کھانے کے وقفے تک بغیر کسی نقصان کے 174رنز بنا لیے ہیں۔

راولپنڈی میں کھیلے جانے والے سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ میں انگلینڈ کے کپتان بین اسٹوکس نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔

اوپنرز نے نسیم شاہ کے پہلے اوور میں 14 رنز بٹورے محض نویں اوور میں نصف سنچری مکمل کر لی۔اوپنرز بین ڈکٹ اور زیک کرالی دونوں جارحانہ انداز میں بیٹنگ کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے ٹیم کی سنچری کھیل کے پہلے ہی گھنٹے میں صرف 13.4 اوورز میں مکمل کرا دی۔

زیک کرالی نے نسبتاً زیادہ جارحانہ انداز اپنایا اور نصف سنچری مکمل کی جبکہ بین ڈکٹ بھی نصف سنچری مکمل کر چکے ہیں۔دونوں نے کھانے کے وقفے تک کوئی وکٹ نہ گرنے دی اور اس دوران چھ رنز فی اوور سے زائد کی اوسط سے کھیلتے ہوئے کھانے کے وقفے تک بغیر کسی نقصان کے 174رنز بنا لیے، بین ڈکٹ 77 اور زیک کرالی 91 رنز پر بیٹنگ کررہے ہیں۔

اس سے قبل انگلینڈ نے پاکستان کی سرزمین پر 17سال بعد کھیلے جا رہے تاریخی ٹیسٹ میچ میں ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔پاکستان کی ٹیم کی اکثریت نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل ہے اور میچ کے لیے پاکستان نے چار کھلاڑیوں کو ڈیبیو کرایا ہے۔

پاکستان کے نوجوان بلے باز سعود شکیل، فاسٹ باؤلرز حارث رؤف اور محمد علی کے ساتھ ساتھ اسپنر زاہد محمود بھی ڈیبیو کررہے ہیں۔

واضح رہے کہ انگلینڈ کی ٹیم 17سال بعد پاکستانی سرزمین پر پہلا ٹیسٹ میچ کھیل رہی ہے جہاں اس سے قبل انگلینڈ نے 2005 کے دورہ پاکستان کے دوران آخری مرتبہ ٹیسٹ میچ کھیلا تھا۔

اس تاریخی میچ کے انعقاد پر اس وقت التوا کے بادل منڈلانے لگے تھے جب میچ سے ایک دن قبل انگلینڈ کے اسکواڈ کے آدھے کھلاڑی وائرس کا شکار ہو کر بیمار پڑ گئے تھے۔

خبر ایجنسی ’اے ایف پی‘ نے رپورٹ کیا تھا کہ انگلش کپتان بین اسٹوکس سمیت دیگر کھلاڑی اور عملے کے متعدد اراکین بھی پیٹ کے انفیکشن کا شکار ہو گئے ہیں۔

البتہ انگلش بلے باز جو روٹ نے راولپنڈی میں پریس کانفرنس کے دوران کھلاڑیوں کی فوڈ پوائزننگ یا کھانے سے منسلک کسی بیماری کے شکار ہونے کی افواہوں کی تردید کی تھی۔

انگلش کرکٹ بورڈ کے ترجمان ڈینی ریوبن نے بھی واضح کیا تھا کہ 7 کھلاڑیوں سمیت اسکواڈ کے 13 سے 14 افراد وائرس کا شکار ہوئے ہیں جس کا کورونا یا فوڈ پوائزننگ سے کوئی تعلق نہیں۔

گزشتہ روز پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے کہا تھا کہ انگلینڈ کے کھلاڑیوں کی طبیعت کی خرابی کے باعث سیریز کا پہلا میچ مقررہ وقت پر شروع کرنے کے لیے فیصلہ صبح تک مؤخر کردیا گیا ہے البتہ آج صبح دونوں بورڈز نے باہمی رضامندی کے ساتھ میچ شروع کرنے کا فیصلہ کیا۔

انگلینڈ نے 48 گھنٹے قبل ہی اپنی فائنل الیون کا اعلان کردیا تھا لیکن انگلش ٹیم کے وائرس کا شکار ہونے کے بعد ان کی ٹیم میں کئی تبدیلیوں کا امکان ہے۔

انگلینڈ کی ٹیم نے پہلے ٹیسٹ میچ کے لیے لیام جیکس اور لیام لیونگسٹن کو ٹیسٹ کیپ دی ہے۔

میچ کے لیے دونوں ٹیمیں ان کھلاڑیوں پر مشتمل ہیں۔

پاکستان: بابر اعظم(کپتان)، عبداللہ شفیق، امام الحق، اظہر علی، سعود شکیل، محمد رضوان، آغا سلمان، نسیم شاہ، حارث رؤف، محمد علی اور زاہد محمود۔

انگلینڈ: بین اسٹوکس(کپتان)، زیک کرالی، بین فوکس، اولی پوپ، جو روٹ، ہیری بروک، ول جیکس، لیام لیونگسٹن، اولی رابنسن، جیک لیچ اور جیمز اینڈرسن۔

یہ بھی دیکھیں

پی سی بی نے مکی آرتھر کو نیا عہدہ دینے کا فیصلہ کرلیا

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے مکی آرتھر کیلئے ہیڈ کوچ کی بجائے …