اتوار , 5 فروری 2023

قطر ورلڈ کپ میں فلسطینیوں کی حمایت ’کشنرپیس ‘ اسکیم کی ناکامی کا ثبوت

دوحہ:ایک امریکی ویب سائٹ نے لکھا ہے کہ قطر میں ہونے والے ورلڈ کپ میں پوری عرب دنیا کے شائقین کی طرف سے فلسطینیوں کی حمایت نے سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خصوصی ایلچی جیرڈ کشنر نے امن اسکیم بری طرح ناکام ثابت کردی ہے۔

امریکی ویب سائٹ "دی انٹرسیپٹ” نے کہا کہ "کشنر، ان کی اہلیہ ایوانکا ٹرمپ اور ان کے اہل خانہ نے ورلڈ کپ کے پہلے راؤنڈ میں شرکت کے لیے تین دن کے لیے قطر کا دورہ کیا۔ ہو سکتا ہے کہ انھوں نے وہاں فلسطین کی حمایت میں نعرے اور نغمے سنے ہوں۔”

سائٹ نے زور دے کر کہا کہ "اسٹیڈیمز میں جو بڑے بڑے بینرز اٹھائے گئے تھے ان میں ’فلسطین کی زاد‘، فلسطینیوں کے لیے جان وتون قربان کرنے کے نعرے درج تھے۔اسرائیلی ٹی وی چینلز آئے روز رپورٹس نشر کرتے ہیں جن میں ورلڈ میں اسرائیل سے نفرت کی بات کی جاتی ہے۔

ویب سائٹ نے مزید کہا کہ یہ "فلسطین کے لیے قابل ذکر حمایت کی تصدیق کرتا ہے اور امن کے حصول میں کشنر کی غلط فہمی ثابت ہوتی ہے جب ٹرمپ نے کچھ عرب حکمرانوں کو فلسطینیوں کے حقوق کا احترام کیے بغیر اسرائیل کے ساتھ اقتصادی تعاون کے معاہدوں پر دستخط کرنے پر آمادہ کیا۔”

کشنر نے اپنی یادداشتوں "بریکنگ ہسٹری” میں دعویٰ کیا تھا کہ اس نے "اسرائیل” کے ساتھ پانچ اسلامی اکثریتی ممالک (یو اے ای، بحرین، مراکش، سوڈان اور کوسوو) کو معاہدوں پر دستخط کرکے "تاریخ کا ایک حقیقی موڑ” حاصل کیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ناروے پولیس نے قرآن پاک کی بے حرمتی کے پروگرام کا اجازت نامہ منسوخ کردیا

اوسلو:دنیا بھر میں مسلمانوں کے بڑھتے ہوئے غصے کے بعد ناروے کی پولیس نے قرآن …