جمعہ , 3 فروری 2023

امریکہ نے یوکرین کو روسی اہداف پر حملہ کرنے کی حوصلہ افزائی نہیں کی:اینٹونی بلنکن

واشنگٹن:امریکی وزیر خارجہ اینٹونی بلنکن نے کہا ہے کہ واشنگٹن نے یوکرین کو روسی اہداف پر حملہ کرنے کی ’نہ حوصلہ افزائی کی ہے اور نہ ہی اسے اس قابل بنایا۔‘انہوں نے یہ بیان ایسے وقت دیا جب ماسکو نے کیف پر تین روسی ہوائی اڈوں پر ڈرون حملے کرنے کا الزام لگایا، جن میں سے دو یوکرین سے سینکڑوں میل دور ہیں۔

یوکرین نے اس معاملے پر کوئی ردِ عمل ظاہر نہیں کیا ہے۔ روس کے صدر ولادیمیر پیوتن نے بارہا امریکہ اور اس کے اتحادیوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ یوکرین کو طویل فاصلے تک مار کرنے والے ہتھیاروں کی فراہمی کے ذریعے ’ریڈ لائن‘ کو پار نہ کریں‘۔ امریکہ کی قیادت میں نیٹو کے فوجی اتحاد نے کیف کو اس طرح کے ہتھیار فراہم کرنے سے انکار کر دیا ہے، ان خدشات کے درمیان کہ یہ جوہری ہتھیاروں سے لیس روس کے ساتھ ایک بڑی کشیدگی کا باعث بن سکتا ہے جس نے 24 فروری کو یوکرین پر حملہ کیا تھا۔

پیر کے روز ریازان اور سراتوف کے علاقوں میں دو روسی ہوائی اڈے پر دھماکوں کی اطلاع ملی۔ ان مقامات پر سٹریٹجک اسلحہ تھا اور جہاں سے یوکرین کے اہم بنیادی ڈھانچے پر باقاعدہ میزائل حملے کیے جاتے تھے۔ روس نے کہا کہ یوکرین کی سرحد سے متصل کرسک کے علاقے میں منگل کو ایک اور حملہ ہوا۔روس کا یوکرین پر تازہ ترین میزائل حملہ پیر کو ہوا، جب ملک بھر میں مختلف اہداف پر 70 راکٹ فائر کیے گئے۔ مقامی حکام نے بتایا کہ ان حملوں میں چار افراد ہلاک ہوئے۔ ملک بھر میں لاکھوں لوگ اب بجلی اور پانی سے محروم ہیں، جس سے یہ خدشہ پیدا ہو رہا ہے کہ منفی درجہ حرارت میں لوگ ہائپوتھرمیا سے مر سکتے ہیں۔

منگل کو ایک بریفنگ میں مسٹر بلنکن نے روس پر الزام لگایا کہ ’وہ شہری بنیادی ڈھانچے کو ختم کرنے کی کوشش کر رہا ہے جو لوگوں کو گرمی، پانی اور بجلی کی سہولت فراہم کر رہا ہے‘۔ انہوں نے کہا کہ ’ماسکو اب ’سرد موسم کو ہتھیار بنا رہا ہے یہ یوکرین میں روزانہ کی حقیقت ہے‘۔ انکا کہنا تھا کہ ’ہم نے نہ تو یوکرینیوں کو روس کے اندر حملہ کرنے کی حوصلہ افزائی کی ہے اور نہ ہی اسے اس کے قابل بنایا ہے، لیکن یہ سمجھنا ضروری ہے کہ یوکرائنی اپنے ملک کے خلاف جاری روسی جارحیت کے ساتھ ہر روز کس کیفیت سے گزر رہے ہیں‘۔

انہوں نے کہا کہ وہ پُرعزم ہیں کہ یوکرائنیوں کے پاس ’اپنے، اپنی سرزمین اور اپنی آزادی کے دفاع کے لیے ضروری سامان موجود ہے‘۔ ان کے ساتھ بات کرتے ہوئے، امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے زور دے کر کہا کہ امریکہ یوکرین کو طویل فاصلے تک مار کرنے کی صلاحیت کو تیار کرنے سے نہیں روکے گا۔ مسٹر آسٹن نے مزید کہا کہ واشنگٹن پہلے ہی یوکرین کو 19 ارب ڈالر سے زیادہ سیکیورٹی امداد دے چکا ہے۔

 

یہ بھی دیکھیں

ہم اسلام، قرآن اور امت اسلامی کے محافظ ہیں:جنرل حسین سلامی

تہران: سپاہ پاسداران کے کمانڈر انچیف جنرل حسین سلامی نے امام علی بن موسی الرضا …