بدھ , 8 فروری 2023

امریکہ نے جوہری سرگرمیوں سے متعلق متعدد پاکستانی کمپنیوں پر پابندیاں عائد کر دی

واشنگٹن: امریکہ نے کئی پاکستانی کمپنیوں کو غیر محفوظ جوہری سرگرمیوں سے منسلک ہونے کی وجہ سے بلیک لسٹ کر دیا۔امریکہ نے کئی پاکستانی کمپنیوں کو ملک کی جوہری سرگرمیوں میں تعاون کرنے پر بلیک لسٹ میں ڈال دیا، ساتھ ہی ساتھ لٹویا، روس، سنگاپور اور سوئٹزرلینڈ میں قائم اداروں کو امریکہ کی قومی سلامتی کے خدشات کے پیش نظر فہرست میں شامل کیا گیا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ: بائیڈن انتظامیہ نے پاکستان اور متحدہ عرب امارات میں 10 کمپنیوں کو بلیک لسٹ کر دیا ہے جن کے مطابق اس کا کہنا ہے کہ پاکستان کی غیر محفوظ جوہری سرگرمیوں کے لیے اشیاء کے استعمال یا ان کا رخ موڑنے یا پاکستان کے میزائلوں کے پھیلاؤ سے متعلق سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے ناقابل قبول خطرات ہیں۔

پاکستان نے ہمیشہ اس بات پر زور دیا ہے کہ ہر قسم کے میزائل اور جوہری ہتھیاروں سمیت فوجی ہتھیاروں کی تیاری کے میدان میں اس ملک کی سرگرمیاں مکمل طور پر واضح ہیں اور اس ملک نے اس سمت میں کوئی غلطی نہیں کی ہے۔

دنیا کی جوہری طاقتوں میں سے ایک ہونے کے ناطے پاکستان نے جوہری عدم پھیلاؤ کے معاہدے (این پی ٹی) پر دستخط نہیں کیے ہیں اور بعض بین الاقوامی تحقیقاتی اداروں کی مبینہ رپورٹ کے مطابق پاکستان میزائل اور جوہری شعبوں میں اپنی فوجی صلاحیتوں میں تیزی سے اضافہ کر رہا ہے۔ آنے والے سالوں میں امریکہ اور روس کے بعد دنیا کی تیسری ایٹمی طاقت بن سکتی ہے۔

اس سے قبل امریکی حکومت نے روس کی فوجی اور دفاعی شعبے میں معاونت، پاکستان کی جوہری سرگرمیوں اور ایرانی کمپنی کو پرزے فراہم کرنے کے بہانے 24 کمپنیوں کے نام ایکسپورٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کیے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

شمالی کوریا کا غبارہ جنوبی کوریا کی فضائی حدود میں داخل

سیئول:جنوبی کوریا نے شمالی کوریا کے ایک غبارے کو اپنی فضائی حدود میں ٹریک کیا …