منگل , 31 جنوری 2023

پاکستان اور بھارت کے درمیان جوہری تنصیبات کی فہرستوں کا تبادلہ

لاہور: پاکستان اور بھارت کے درمیان جوہری تنصیبات اور سہولیات کی فہرستوں کا سالانہ تبادلہ ہوا ہے۔ذرائع کے مطابق پاکستان اور بھارت کے درمیان جوہری تنصیبات اور تنصیبات کے خلاف حملوں کی ممانعت کے معاہدے پر 31 دسمبر 1988 کو دستخط کیے گئے تھے اور 27 جنوری 1991 کو اس کی توثیق کی گئی۔

معاہدے میں دیگر چیزوں کے ساتھ ساتھ یہ بھی کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک ایک دوسرے کو اپنی جوہری تنصیبات اور تنصیبات کے بارے میں آگاہ کریں گے۔اس حوالے سے ہر سال یکم جنوری کو معاہدے کے تحت پاکستان میں جوہری تنصیبات کی فہرست باضابطہ طور پر آج وزارت خارجہ میں اسلام آباد میں بھارتی ہائی کمیشن کے نمائندے کے حوالے کی گئی۔واضح رہے کہ فہرستوں کے تبادلے کا سلسلہ یکم جنوری 1992 سے جاری ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ازبکستان اور کرغزستان کی نئی سرحدی حد بندی، دہائیوں پرانا تنازع ختم

تاشقند:وسطی ایشیا کے ممالک ازبکستان اور کرغزستان نے سرحدی جھڑپوں کے خاتمے کیلئے نئی حدبندی …