جمعرات , 2 فروری 2023

صیہونی حکومت کا جاسوسی کے لیے جانوروں کا استعمال

یروشلم:ایک فلسطینی میڈیا نے لکھا: صیہونی حکومت دریائے اردن کے مغربی کنارے میں فلسطینیوں کی جاسوسی اور ان کی فصلوں کو نقصان پہنچانے کے لیے جانوروں کا استعمال کرتی ہے۔فلسطینی اتھارٹی کے سرکاری ادارے "الحیات الجدید” اخبار نے آج ہفتے کے روز اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے: صیہونی آباد کاروں کے جرائم روز بروز متنوع اور پیچیدہ ہوتے جا رہے ہیں اور اس سلسلے میں انہوں نے کہا: وہ خود کو فلسطینیوں کے خلاف کوئی بھی ذریعہ استعمال کرنے کی اجازت دیتے ہیں۔

اخبار نے انکشاف کیا ہے کہ صہیونی آباد کاروں نے خفیہ کیمروں کے ساتھ جاسوسی کا سامان گایوں کی گردنوں پر نصب کیا تھا۔”الحیات الجدیدہ” اخبار نے دیہی علاقوں میں فلسطینیوں کی نقل و حرکت کے بارے میں آگاہ کرنے کے لیے جاسوسی کے آلات استعمال کرنے کے صہیونی آبادکاروں کے مقصد کا جائزہ لیا۔

اس فلسطینی میڈیا نے دریائے اردن کے مغربی کنارے میں صہیونی آباد کاروں کی طرف سے فلسطینیوں کے زرعی کھیتوں کو تباہ کرنے کے لیے جانوروں کے استعمال کی خبر بھی دی اور فلسطینی دیہاتیوں کا حوالہ دیا اور لکھا: آباد کار فلسطینیوں کی فصلوں کو تباہ کرنے کے لیے جنگلی سؤروں کے ریوڑ چھوڑتے ہیں۔

یہ پہلی بار نہیں ہے کہ فلسطینیوں نے صہیونی آباد کاروں کی طرف سے فلسطینیوں کے زرعی کھیتوں کو تباہ کرنے کے لیے جانوروں کے استعمال کی اطلاع دی ہے۔ سنہ 2008 میں یروشلم (قبضہ) میں مقیم فلسطینیوں کے کھیتوں میں ’امیون چوہوں‘ کو چھوڑے جانے کی بھی اطلاعات سامنے آئی تھیں۔

یہ بھی دیکھیں

مبینہ بیٹی چھپانے پر عمران خان نااہلی کیس میں لارجر بینچ بنانے کا فیصلہ

اسلام آباد: عمران خان کے خلاف مبینہ بیٹی کو کاغذات نامزدگی میں ظاہر نہ کرنے …