جمعرات , 9 فروری 2023

فیفا نے سعودی عرب کی پہلی خاتون کو بین الاقوامی ریفری مقرر کر دیا

ریاض:فٹ بال کی بین الاقوامی فیڈریشن تنظیم (فیفا) نے سعودی عرب کی انودالعسماری کابین الاقوامی ریفری کے طورپرتقررکیا ہے۔سعودی عرب کی خواتین کی پہلی قومی ٹیم کے آغاز کے ایک سال سے بھی کم عرصے کے بعد العسماری مملکت کی پہلی خاتون ریفری بن گئی ہیں۔العسماری عالمی ادارے کی جانب سے اعلان کردہ بین الاقوامی پینل میں شامل آٹھ سعودیوں میں سے ایک ہیں۔

انھوں نے اے ایف پی کو بتایا کہ ’’میں سعودی کھیلوں کی تاریخ میں بین الاقوامی بیج حاصل کرنے والی پہلی سعودی خاتون ریفری بننے پرخوش ہوں‘‘۔اسی ہفتے پرتگالی فٹ بالراور پانچ بار کے بیلن ڈی اور فاتح کرسٹیانورونالڈو نے النصر فٹ بال کلب کے ساتھ تاریخی معاہدے کے بعد سعودی عرب میں قدم رکھا ہے۔سعودی عرب بین الاقوامی فٹ بال کے میدان میں اپنا نام بنارہا ہے۔فٹ بال سعودی عرب میں نمبر ایک کھیل ہے۔

اس نے حالیہ برسوں میں خاص طورپرقطر میں دسمبرمیں ختم ہونے والے فیفاورلڈ کپ عالمی ٹورنامنٹ میں ارجنٹائن کے خلاف شاندار فتح حاصل کی تھی۔اس نے اس جیت کے بعد شہرت اور رفتار حاصل کرنا جاری رکھا ہے۔العسماری کاتقررسعودی عرب میں خواتین فٹ بال کے لیے تازہ تاریخی سنگ میل بھی ہے۔دسمبرمیں سعودی عرب نے اے ایف سی ویمنزایشیائی کپ 2026 کی میزبانی کے لیے اپنی بولی جمع کرائی تھی۔سعودی عرب کی جانب سے صرف خواتین کے لیے منعقد ہونےوالے اس ایونٹ کے لیے بولی لگانے کا اقدام ایشیا بھرمیں صنف نازک کی پوشیدہ صلاحیتوں اور مواقع کو بروئے کار لانے کے لیے کوششوں کی مثال ہے۔

مقابلے کی میزبانی کی کامیاب کوشش کی صورت میں سعودی عرب اندرون وبیرون ملک کھیلوں میں خواتین کی قیادت کو آگے بڑھانے میں اہم کردار ادا کرے گا۔سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن (ایس اے ایف ایف) کے صدر یاسرالمشعل نے اس وقت کہا:’’سعودی عرب میں خواتین کے فٹ بال کامستقبل روشن ہے اور ہم یہاں اور پورے ایشیا میں اس کھیل کو فروغ دینے کے لیے پرعزم ہیں۔زیادہ سے زیادہ نوجوان لڑکیاں اس ملک میں فٹ بال کھیل رہی ہیں اور ہم ان کی مزید حوصلہ افزائی کرناچاہتے ہیں۔ اے ایف سی ویمنزایشین کپ 2026 کی میزبانی ہماری کھلاڑیوں کے لیے ایک بہت اچھا موقع ہوگا اور ہمارے مداحوں کے جوش وجذبے سے اسے یادگار بنایا جائے گا‘‘۔

سعودی عرب میں گذشتہ تین سال میں، نچلی سطح پرکھلاڑیوں کی ترقی، مقابلوں، کوچنگ اور بہت کچھ میں اہم سرمایہ کاری کی گئی ہے، بشمول خواتین فٹ بال لیگ اور لڑکیوں کی اسکول لیگ کا اہتمام کیا گیا۔ سعودی عرب فٹ بال فیڈریشن نے خواتین کی ٹیم باضابطہ طورپر2019 میں قائم کی تھی۔یہ فیڈریشن450 رجسٹرڈ کھلاڑیوں ، 49 کوالیفائیڈ ریفریوں اور900 سے زیادہ کوچوں کی میزبانی کرتی ہے۔

 

یہ بھی دیکھیں

ویمنز ٹی20 ورلڈکپ؛ ٹرافی کی تقریبِ رونمائی کا انعقاد

کیپ ٹاؤن: جنوبی افریقہ میں شیڈول آئی سی سی ویمنز ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کی …