جمعرات , 2 فروری 2023

ایم کیو ایم کی حکومت سے علیحدگی کی دھمکی؛ وزیرعظم کی تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان نے کراچی میں حلقہ بندیوں کے معاملے پر وفاقی حکومت سےعلیحدگی کی دھمکی کے بعد وزیراعظم شہباز شریف نے پارٹی کے کنوینر کو فون کرکے تمام تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی جبکہ رات گئے ایم کیو ایم کے وفد نے گورنر ہاؤس میں گورنر سندھ کامران خان ٹیسوری سے ملاقات کی جس کے بعد ایم کیو ایم نے آج (بروز ہفتے) کو کے ایم سی گراؤنڈ پی آئی بی کالونی میں ہونے والا جنرل ورکرز اجلاس ملتوی کردیا۔

واضح رہے کہ وفاقی حکومت سے علیحدگی کے معاملے پر ایم کیو ایم پاکستان رابطہ کمیٹی نے ہنگامی اجلاس طلب کیا تھا جبکہ ایم کیوایم کے وفاقی وزرا نے اپنے استعفے خالد مقبول صدیقی کے پاس جمع کرادیے ہیں۔

حکومت حلقہ بندیوں میں مدد نہیں کرسکتی حکومت میں رہنے کا جواز نہیں ہے، ایم کیو ایم
ذرائع نے بتایا کہ اگر حکومت حلقہ بندیوں میں مدد نہیں کرسکتی حکومت میں رہنے کا جواز نہیں ہے جس کے بعد ایم کیوایم کی علیحدگی سے وفاقی حکومت خطرے میں پڑسکتی ہے جبکہ ایم کیوایم نے اہم فیصلوں کی تجدید کیلئے آج جنرل ورکرز اجلاس بھی بلوایا تھا جس سے ملتوی کردیا گیا۔

خیال رہے کہ اسلام آباد میں پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان اور ان کے قریبی ساتھیوں کے مابین مشاورت سے متعلق بتایا گیا تھا کہ صدر مملکت وزیراعظم شہباز شریف کو قومی اسمبلی میں اعتماد کا ووٹ لینے کا کہہ سکتے ہیں۔

رونما ہونے والی سیاسی صورتحال کے پیش نظر اگر متحدہ قومی موومنٹ پاکستان وفاقی حکومت سے علیحدگی اختیار کرتی تو وزیراعظم شہباز شریف کو اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں ناکامی ہوسکتی ہے۔

وزیراعظم شہباز شریف، آصف علی زرداری اور مولانا فضل الرحمان کا خالد مقبول صدیقی کو فون

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کی جانب سے کراچی میں حلقہ بندیوں کے معاملے پر وفاقی حکومت سےعلیحدگی پر غور کے ساتھ ہی وزیراعظم شہباز شریف نے خالدمقبول صدیقی سے رابطہ کرکے آج رات ہی مثبت پیش رفت کی یقین دہانی کرادی۔

اس حوالے سے ذرائع نے بتایا کہ خالد مقبول صدیقی نے وزیراعظم کو کہا کہ اب عمل درآمد چاہیے ، عوام اور کارکنان کا پریشر ہے اور آج دن سے آپ کے مثبت جواب کا انتظار کررہے ہیں۔

علاوہ ازیں پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے بھی خالد مقبول صدیقی کو فون کرکے تحفظات دور کرنے کی یقین دہانی کرائی۔

ایم کیو ایم پاکستان کے کنویئر نے دو ٹوک مؤقف اختیار کیا کہ اگر اس بار بھی دھوکا دیا گیا تو ہمارا فیصلہ سب کو معلوم ہے کیا ہوگا۔ ذرائع کے مطابق خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ سندھ کابینہ کے فیصلوں پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے۔

گورنر سندھ کامران خان ٹیسوری نے بھی ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی سے ٹیلی فونک رابطہ کیا اور معاملات کو افہام وتفہیم اور باہمی مشاورت سے حل کرنے کی درخواست کی۔

بعدازاں بہادرآباد مرکزسے روانگی کے وقت خالد مقبول صدیقی نے بتایا کہ آصف علی زرداری سے رابطہ ہوا ہے اور امید ہے کہ وہ اپنا کہا پورا کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ آصف علی زرداری نےکہا ہمیں آپ کی مشکلات کا اندازہ ہے جبکہ مطالبات پورے نہ ہونےکی صورت میں دوگھنٹےبعد دوبارہ بیٹھیں گے۔

ایاز صادق نے بھی ایم کیو ایم پاکستان کے کنونئیر خالد مقبول صدیقی سے رابطہ کیا اور بتایا کہ وزیراعظم کو اپ کے تحفظات سے آگاہ کیا تھا اور معاملے کو دیکھ رہے ہیں، مثبت چیزیں سامنے آئیں گی۔

ایم کیو ایم پاکستان کا وفد کل اسلام آباد میں وزیراعظم سے ملاقات کرے گا، ذرائع

ذرائع نے بتایا کہ ایم کیو ایم پاکستان کا وفد 14 جنوری (بروز ہفتے) کو اسلام آباد میں وزیراعظم سے ملاقات کرے گا، وفد کی قیادت خالد مقبول صدیقی کریں گے جبکہ وفد میں فاروق ستار، مصطفی کمال اور وسیم اختر بھی شامل ہوں گے۔

متحدہ قومی موومنٹ کے کنوینئر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی حیدرآباد اور میرپور خاص سے رابطہ کمیٹی کے اراکین کے ہمراہ گورنر ہاؤس پہنچے اور گورنر سندھ کامران ٹیسوری سے ملاقات کی۔

گورنر سندھ نے شریک چیئرمین پیپلز پارٹی آصف علی زرداری سے ہونے والی بات چیت پر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کو اعتماد میں لیا۔

متحدہ قومی موومنٹ کے کنوینئر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کی سر براہی میں رات گئے ایم کیو ایم کے وفد نے گورنر ہاؤس میں گورنر سندھ کامران خان ٹیسوری سے ملاقات کی جس کے بعد ایم کیو ایم نے ہفتے کوکے ایم سی گراؤنڈ پی آئی بی کالونی میں ہونے والا جنرل ورکرز اجلاس ملتوی کردیا۔

ملاقات میں خالد مقبول نے بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے رابطہ کمیٹی کے فیصلوں اور پی ڈی ایم کے مختلف رہنماؤں آصف علی زرداری ، مولانا فضل الرحمان اور دیگرکے ساتھ ہونے والی ٹیلی فونک بات چیت سے آگاہ کیا جبکہ گورنر سندھ نے آصف علی زرداری سے ہونے والی بات چیت کے بارے میں ایم کیو ایم کے وفد کو بریفنگ دی۔

یہ بھی دیکھیں

آئی ایم ایف کا سرکاری افسران اور اہل خانہ کے اثاثے ظاہر کرنے کا مطالبہ

اسلام آباد :آئی ایم ایف نے پاکستان سے تکنیکی سطح پر مذاکرات کے دوران گریڈ …