بدھ , 1 فروری 2023

اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے ٹیچر سمیت ایک فلسطینی شہید

مقبوضہ بیت المقدس: اسرائیلی فوج نے جنین میں چھاپے کے دوران ٹیچر سمیت ایک فلسطینی کو گولی مار کر شہید کر دیا۔الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق جنوری میں مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کے ہاتھوں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 17 ہو گئی ہے۔

مقامی صحافیوں نے بتایا کہ 57 سالہ جواد فرید 6 بچوں کا باپ اور ایک مقامی اسکول میں ٹیچر تھا۔ انہوں نے بتایا کہ انہیں پناہ گزین کیمپ میں شہید کیا گیا جبکہ شہید ہونے والے دوسرے فلسطینی کی شناخت 28 سالہ ادھم جبرین کے نام سے ہوئی ہے۔
فلسطینی وزارت صحت نے شہید ہونے والے افراد کے ناموں اور عمروں کی تصدیق کی اور بتایا کہ کم از کم 4 دیگر فلسطینی اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی بھی ہوئے ہیں۔عینی شاہد مقامی صحافی نے بتایا کہ ٹیچر کو ان کے گھر کے سامنے سڑک پر اس وقت گولی ماردی گئی جب وہ ادھم جبرین کو گولی مارنے کے بعد مدد کرنے کی کوشش کر رہے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

فرانس : پنشن کے قانون میں تبدیلی کے خلاف ملک بھر میں مظاہرے

پیرس :فرانسیسی حکومت کی جانب سے پنشن کے قوانین میں تبدیلی کے خلاف شہریوں کی …