ہفتہ , 20 اپریل 2024

خواتین کی تعلیم پر پابندی مستقل نہیں،افغان وزیر داخلہ

کابل:وزیر داخلہ سراج‌ الدین حقانی نے کہاکہ خواتین کی تعلیم پر پابندی مستقل نہیں بیرونی عوامل کی وجہ سے مختصر عرصے کا تعطل آگیا ہے۔غیر ملکی خبررساں ایجنسی نے آوائے افغانستان کے حوالے سے نقل کیاہےکہ افغانستان میں طالبان کی عبوری حکومت کے وزیر داخلہ سراج الدین حقانی نے اقوام متحدہ کے انسانی امور کے ڈپٹی سیکرٹری جنرل سے ملاقات کی۔

سراج‌ الدین حقانی نے ملاقات میں کہاکہ خواتین کی تعلیم پر پابندی مستقل نہیں بیرونی عوامل کی وجہ سے مختصر عرصے کا تعطل آگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزارت اعلی تعلیم، تعلیم کے حوالے سے افغان عوام کے حقوق کی ادائیگی اپنی ذمہ داری سمجھتی ہے اور اسلامی اور قومی اقدار کی روشنی میں ملک کی ترقی اور بہتری کے لیے کام کر رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ امارت اسلامیہ کے مخالفین اعلی تعلیم اور اسلامی نظام کے قیام کے حوالے سے امارت اسلامیہ کو تنقید کا نشانہ بنا ر ہے ہیں اور اپنے مذموم مقاصد کی تکمیل کے لیے استعمال کر رہے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

عمران خان نے تحریک انصاف کے کسی بڑے سیاسی رہنما کے بجائے ایک وکیل کو نگراں چیئرمین کیوں نامزد کیا؟

(ثنا ڈار) ’میں عمران کا نمائندہ، نامزد اور جانشین کے طور پر اس وقت تک …