ہفتہ , 4 فروری 2023

اسرائیلی وزیر کی غزہ کو جنگ کی دھمکی

یروشلم:اسرائیلی حکومت کے داخلی سیکورٹی کے وزیر ایتامر بن گویر نے پولیس سربراہ کے ساتھ ایک مشترکہ کانفرنس میں غزہ پٹی پر اس حکومت کی نئی فوجی جارحیت کے امکانات کی خبر دی ہے۔ اسرائیلی حکومت کی دائیں بازو اور انتہا پسند کابینہ کے داخلی سیکورٹی کے وزیر اتمر بن گویر نے کہا کہ اندازوں سے ظاہر ہوتا ہے کہ اسرائیل میں گارڈین آف دی وال- 2 کے نام سے مشہور آپریشن اور اور وہ کارروائی جس میں مئی 2021 میں صیہونی حکومت کی جانب سے فلسطینی علاقوں پر جارحیت کے اشارے ملتے ہیں، قریب ہے۔

عربی-21 نامی ویب سائٹ نے لکھا کہ عبرانی اخبار یدیعوت آحارنوت کے دعوے کے مطابق انہوں نے یہ بیان پولیس کے ڈائریکٹر جنرل "کبی شبتائی” کے ساتھ ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران دیا۔بن گویر نے وضاحت کی کہ میں نے اس وزارت کے بیشتر ملازمین، پولیس، سرحدی افواج اور اسرائیلی فوج سے جو بیانات سنے ہیں، وہ یہ ہیں کہ دیواروں کی حفاظت راستے میں ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس وجہ سے اس طرح کے منظر نامے کا ایک ہی حل ہے اور وہ ہے پولیس فورس کو مضبوط کرنا اور محافظ اور نیشنل گارڈ کو تشکیل دینا۔

بن گویر نے مزید کہا کہ اس سلسلے میں صیہونی پولیس فورس کی سرگرمیوں کو وسعت دی جائے گی اور اس کے علاوہ دس ہزار فوجیوں کو بھرتی کیا جائے گا جنہیں اسرائیل کے تمام حصوں میں رضاکارانہ دستے کا نام دیا جائے گا۔

صیہونی فوجی کے ایک ماہر نے اس بات پر زور دیا کہ مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں حالات کشیدہ ہیں اور حالات فلسطینیوں کی بغاوت اور انتفاضہ کے رونما ہونے کی طرف بڑھ رہے ہیں، خاص طور پر جیسے جیسے رمضان کا مقدس مہینہ قریب آرہا ہے ویسے ویسے حالات دھماکہ خيز ہوتے جا رہے ہیں۔

 

یہ بھی دیکھیں

عراقی معاشرہ اور نوجوان ثقافتی یلغار کا شکار ہیں:آیت الله سید محمد تقی مدرسی

بغداد:عراقی معروف عالم دین آیت الله سید محمد تقی مدرسی نے، حوزہ ہائے علمیه عراق …