جمعہ , 31 مارچ 2023

مودی کا بھارت کو ہندو ملک بنانے کا منصوبہ بے نقاب

مودی تیسری مرتبہ الیکشن جیت کر بھارت کو ہندو ملک قرار دے گا، امریکی اخبار

نئی دہلی:معروف امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے مودی کا بھارت کو ہندو ملک بنانے کا منصوبہ بے نقاب کردیا۔عالمی میڈیا نے بھارت میں بڑھتی انتہا پسندی پر خطرے کی گھنٹی بجادی، بی بی سی کے بعد نیویارک ٹائمز بھی مودی سرکارکے خلاف بول پڑا اور کہا کہ نہرو کا سیکولر بھارت انتہا پسندوں کی بھینٹ چڑھ گیا۔

امریکی اخبارنیویارک ٹائمزکے کالم میں مودی سرکارپر شدید تنقیدکی گئی، بی جے پی کے آنے کے بعد بھارت میں شدت پسندی اوراقلیتوں کے خلاف رجحانات میں اضافہ ہوا، مسلمانوں کے خلاف جرم پر سزا کا کوئی رواج نہیں۔

رپورٹ میں یہ بھی دعویٰ کیا گیا کہ مودی سرکارنےجان بوجھ کر مسلم مخالف قوانین بنائے ۔رپورٹ میں شہریت کے قوانین کی تبدیلی اورکشمیر کے غاصبانہ ناجائزانضمام کا حوالہ بھی دیا گیا ۔

لیڈیا پولگرین کے مطابق مودی ہندو انتہا پسند تنظیم آر ایس ایس کا سرگرم رکن ہے، مودی سرکار نے منظم انداز میں آزادی اظاہررائے پرکریک ڈاؤن کیا اور تنقیدی آوازوں کو دہشت گردی قوانین سے دبایا، میڈیا کو کنٹرول کرنے کے لئے ایمر جنسی پاورز کا سہارا لیا گیا، ہندو انتہا پسند ہمیشہ سے بھارت کی سیکولر آئینی حیثیت ختم کرکے اسے ہندو ملک کا درجہ دینا چاہتے ہیں۔

لیڈیا پولگرین کے مطابق مودی تیسری مرتبہ الیکشن جیت کر آئین تبدیل کرکے بھارت کو ہندو ملک قرار دے گا، پے درپے چھپنے والے مضامین ظاہر کرتے ہیں کہ عالمی میڈیا میں مودی کی انتہا پسند پالیسیوں پر اضطراب پایا جاتا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ کیا عالمی میڈیا اور مغرب مودی کی 2024 میں جیت پر پریشان ہے؟ کیا مودی تیسری مرتبہ وزیراعظم بننے کی ہوس میں پاکستان کے خلاف ایک اور فالس فلیگ آپریشن کا ڈرامہ رچائے گا؟ کیا ایک اور مودی دور حکومت بھارت میں ہندو انتہا پسندی کو خطرناک حد تک فروغ نہیں دے گا؟کیا ہندو توا کے تحت چلنے والا ایٹمی بھارت خطے بالخصوص پاکستان اور عالمی دنیا کی سلامتی کےلئے خطرہ تو نہیں؟۔

یہ بھی دیکھیں

بھارت میں رام نوامی جلوس کے شرکاء کی مسجد کے باہر ہنگامہ آرائی

نئی دہلی: مودی سرکار میں مذہبی آزادی کے حق کو بری طرح پامال کیا جا …