اتوار , 26 مارچ 2023

خاتون جج دھمکی کیس: عمران نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کو چیلنج کر دیا

اسلام آباد: خاتون جج کو دھمکی دینے سے متعلق کیس میں سابق وزیراعظم عمران خان نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کو چیلنج کر دیا۔سیشن جج طاہر محمود کے رخصت پر ہونے کے باعث ڈیوٹی جج سکندر خان کی عدالت میں درخواست دائر کی گئی، درخواست عمران خان کی وکیل نعیم حیدر پنجوتھا اور انتظار حیدر پنجوتھا کی جانب سے دائر کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ سیشن کورٹ نے گزشتہ روز چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے تھے۔

خاتون جج کو دھمکی دینے کے کیس میں سابق وزیراعظم عمران خان 13 مارچ کو بھی عدالت میں پیش نہ ہوئے، عدالت نے سکیورٹی خدشات پر حاضری سے استثنیٰ کی دائر درخواست خارج کرتے ہوئے عمران خان کو 29 مارچ تک گرفتار کرکے پیش کرنے کا حکم جاری کردیا۔

عمران خان کے وکلاء کی جانب سے بریت کی درخواست بھی کی گئی جس پر عدالت نے دلائل کیلئے آئندہ سماعت پر فریقین کو نوٹسز جاری کر دیے۔

دوران سماعت سول جج رانا مجاہد رحیم کا کہنا تھا کہ عمران خان عدالتی اوقات میں نہ آئے تو ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کروں گا جس کے بعد عدالت نے سماعت میں وقفہ کر دیا۔

وقفے کے بعد سماعت شروع ہوئی تو سول جج رانا مجاہد رحیم نے کہا کہ عدالت نے عمران خان کو فرد جرم کی کارروائی آگے بڑھانے کیلئے طلب کیا ہے، ابھی انہی مقدمے کی کاپیاں فراہم کرنی ہیں، عمران خان کی آج حاضری سے استثنیٰ کی درخواست خارج کر رہا ہوں۔

اس پر وکیل صفائی انتظار پنجوتھا نے کہا کہ عمران خان سابق وزیراعظم ہیں، وزیرآباد میں ان پر قاتلانہ حملہ ہوا، ابھی تک عمران خان مکمل صحت یاب بھی نہیں ہوئے، عمران خان پر دوبارہ قاتلانہ حملہ ہوسکتا ہے، عمران خان عدالتوں سے بھاگ رہے ہیں نہ کوئی بہانہ کر رہے ہیں، آج حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور کی جائے۔

بعدازاں عدالت نے عمران خان کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے درخواست خارج کردی۔

واضح رہے کہ خاتون جج کو دھمکانے کے کیس میں سابق وزیراعظم عمران خان کے خلاف تھانہ مارگلہ میں مقدمہ درج ہے۔

یہ بھی دیکھیں

انسداد دہشتگردی عدالت میں عمران خان کی عبوری ضمانت منظور

لاہور:لاہور کی انسداد دہشتگردی عدالت نے چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی عبوری …