منگل , 23 اپریل 2024

ڈائٹنگ کے بغیر جسمانی وزن میں کمی لانے والے آسان ترین طریقے

اسلام آباد:جسمانی وزن میں اضافہ تو کسی بھی فرد کو پسند نہیں ہوتا بالخصوص اگر پیٹ باہر نکلنا شروع ہوجائے۔جسمانی وزن میں کمی کے لیے اکثر افراد ڈائٹنگ کرتے ہیں، مگر یہ طریقہ کار عموماً طویل المعیاد بنیادوں پر کارآمد ثابت نہیں ہوتا۔

تو ایسے آسان طریقوں کے بارے میں جانیں جن کی مدد سے آپ کھانے کی مقدار میں کمی لائے بغیر بھی جسمانی وزن اور چربی کو گھٹا سکتے ہیں۔

کھانا آرام سے کھائیں
کسی مخصوص اور پیچیدہ غذائی پلان کے بغیر جسمانی وزن میں بہت تیزی سے کمی لانے کا ایک آسان ترین طریقہ خوراک کو اچھی طرح چبا کر نگلنا ہے۔جب آپ کھانا بہت تیزی سے نگلتے ہیں تو دماغ کو علم ہی نہیں ہوتا کہ پیٹ بھر چکا ہے اور اس کے نتیجے میں لوگ ضرورت سے زیادہ کھالیتے ہیں، جس کا نتیجہ موٹاپے کی شکل میں نکلتا ہے۔

زیادہ نیند
ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ ہر رات صرف ایک گھنٹے کی اضافی نیند سے ایک سال میں جسمانی وزن میں 6 کلوگرام کمی لانا ممکن ہے۔

تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ اضافی نیند سے دن بھر میں جسم کا حصہ بننے والی غذائی کیلوریز کی مقدار میں 6 فیصد کمی آسکتی ہے۔

یہ بات پہلے ہی معلوم ہوچکی ہے کہ ہر رات 7 گھنٹے سے کم نیند کے نتیجے میں جسمانی وزن میں تیزی سے اضافہ ہوتا ہے۔

پھلوں اور سبزیوں کا زیادہ استعمال
دوپہر یا رات کے کھانے میں ایک کی بجائے 3 سبزیوں کو شامل کرنے سے آپ کوشش کیے بغیر ہی زیادہ مقدار میں سبزیاں کھاسکتے ہیں۔جسمانی وزن میں کمی کے لیے پھلوں اور سبزیوں کا زیادہ استعمال بہترین طریقہ کار ہے۔

سالم اناج (Whole Grain)
چھلکے سمیت (ثابت یا پیس کر) اناج جیسے چاول، جو اور دیگر کا استعمال جسمانی وزن میں کمی لانے میں مدد فراہم کرتا ہے جبکہ کولیسٹرول لیول بھی بہتر ہوتا ہے۔

پراسیس گوشت سے دوری
پراسیس گوشت کا استعمال جسمانی وزن میں اضافہ کرتا ہے جبکہ اس سے گریز کرکے موٹاپے میں کمی کے ساتھ ساتھ جسمانی چربی کو گھلانے میں بھی مدد ملتی ہے۔

سافٹ ڈرنک کی جگہ پانی کا استعمال
دن بھر میں محض ایک سافٹ ڈرنکس کی جگہ پانی کو دینے سے آپ جسم کو 10 چائے کے چمچ چینی سے بچا سکتے ہیں۔میٹھے مشروبات کا استعمال کم کرکے آپ بتدریج جسمانی وزن میں کمی لاسکتے ہیں۔

سبز چائے سے لطف اندوز ہوں
سبز چائے پینے سے بھی جسمانی وزن میں کمی لانا ممکن ہے۔تحقیقی رپورٹس کے مطابق اس مشروب سے جسم کے اندر کیلوریز جلانے والا انجن متحرک ہوتا ہے جس سے جسمانی وزن میں کمی لانا آسان ہوجاتا ہے۔

یوگا بھی مفید
ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ یوگا کرنے والے افراد کا جسمانی وزن دیگر کے مقابلے میں کم ہوتا ہے۔اس کی وجہ تو واضح نہیں مگر ماہرین کے خیال میں یوگا کے عادی افراد غذا کے حوالے سے زیادہ بہتر سوچ رکھتے ہیں۔

گھر کے کھانے کو ترجیح دیں
باہر کے کھانوں میں چکنائی اور دیگر ایسے اجزا کا استعمال زیادہ ہوتا ہے جو جسمانی وزن میں اضافے کا باعث بنتے ہیں، یہی وجہ ہے کہ گھر کے کھانوں کو ترجیح دینا جسمانی وزن کو کنٹرول میں رکھتا ہے۔

چیونگم سے مدد لیں
بغیر چینی کی چیونگم چبانے خاص طور پر Mint گم کو چبانے سے بے وقت کچھ کھانے کی خواہش کو دبانا آسان ہوجاتا ہے۔درحقیقت Mint گم کا ذائقہ ایسا ہوتا ہے کہ اس کے بعد دیگر غذاؤں کا ذائقہ اچھا نہیں لگتا۔

چھوٹی پلیٹوں کا استعمال
جی ہاں اگر آپ 12 انچ کی بجائے 10 انچ والی پلیٹ میں کھانا کھائیں گے تو کم کیلوریز جسم کا حصہ بنیں گی۔اس طریقہ کار سے ایک سال کے دوران جسمانی وزن میں ساڑھے 4 سے 9 کلوگرام تک کمی آسکتی ہے۔

کیلوریز جلائیں
ڈائٹنگ کے بغیر جسمانی وزن میں سال بھر میں ساڑھے 4 کلوگرام تک کمی لانا چاہتے ہیں تو روزانہ ایک میل یا 20 منٹ تک چہل قدمی کریں، 20 منٹ تک باغبانی کی سرگرمیوں کا حصہ بنیں، 30 منٹ تک گھر کی صفائی کریں یا 10 منٹ تک جاگنگ کریں۔

 

یہ بھی دیکھیں

ڈائری لکھنے سے ذہنی و مدافعتی صحت پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں؟

لندن:کمپیوٹرائزڈ اور اسمارٹ موبائل فون کے دور میں اب اگرچہ ڈائریز لکھنے کا رجحان کم …