جمعہ , 19 اپریل 2024

امریکہ کو ایران سے آخری جوابی کاروائی کیلئے تیار رہنا چاہیے، جنرل حسین سلامی

میجر جنرل حسین سلامی نے کہا کہ واشنگٹن مغربی ایشیائی ممالک میں ذلت آمیز ناکامیوں کے بعد ایران سے آخری جوابی کاروائی کیلئے منتظر رہے۔سپاہ پاسدارانِ انقلابِ اسلامی کے کمانڈر انچیف میجر جنرل حسین سلامی نے جمعہ کے روز صوبۂ اصفہان کے شہر گلپائیگان میں سپاہ پاسدارانِ انقلابِ اسلامی کے شہداء کی یاد میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی سربراہی میں دشمنوں نے پابندیاں عائد کر کے ایران کو کمزور کرنے کی کوشش کی، لیکن ایرانی غیور قوم کی مسلسل مزاحمت اور استقامت نے انہیں ناکام بنا دیا۔

انہوں نے کہا کہ دشمنوں نے گزشتہ سال کے فسادات میں اسلامی جمہوری نظام سے عوام کو مایوس اور ناامید کرنے کی حتیٰ الامکان کوشش کی مگر ایرانی قوم نے اتحاد و وحدت کا مظاہرہ کرتے ہوئے انہیں مایوس کیا اور ان کے خواب کو شرمندہ تعبیر کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جو منصوبہ دشمنوں نے ہمارے لئے تیار کیا تھا وہ اب ان کے ہی گلے پڑ گیا ہے جس کی واضح مثال، آج غاصب صہیونی حکومت کا بہت سے مسائل اور ناکامیوں سے دوچار ہونا ہے۔

میجر جنرل سلامی نے کہا کہ ان دنوں غزہ کی پٹی سے غاصب صہیونیوں کے سروں پر آگ کے میزائل داغے جا رہے ہیں، لیکن غاصب صہیونی کچھ نہیں کر پا رہے اور وہ مضطرب اور بے بس ہیں اور امریکہ بھی اس خطے سے نکل چکا ہے۔

جنرل سلامی نے کہا کہ ہم نے امریکیوں کو حاج قاسم سلیمانی کی شہادت کے بعد عین الاسد پر حملے کے ذریعے پہلا دھچکا لگایا اور اب دوسرا دھچکا لگانے میں کامیاب ہو رہے ہیں، جو کہ خطے سے شیطان بزرگ کی بے دخلی کے سوا کچھ نہیں ہے۔ سپاہ پاسدارانِ انقلابِ اسلامی کے کمانڈر ان چیف نے یہ بیان کرتے ہوئے کہ آج یورپی ممالک کو بہت سے چیلنجوں کا سامنا ہے، لہٰذا امریکیوں کو بھی آخری دھچکے کیلئے تیار رہنا چاہیئے۔

یہ بھی دیکھیں

عمران خان نے تحریک انصاف کے کسی بڑے سیاسی رہنما کے بجائے ایک وکیل کو نگراں چیئرمین کیوں نامزد کیا؟

(ثنا ڈار) ’میں عمران کا نمائندہ، نامزد اور جانشین کے طور پر اس وقت تک …