بدھ , 24 اپریل 2024

مسجد اقصیٰ کا مسئلہ اسرائیل جنگ کے ذریعے حل کرنے کی کوشش کر رہا ہے: خالد مشعل

مقبوضہ بیت المقدس:اسلامی تحریک مزاحمت [حماس] کے بیرون ملک امور کے سربراہ خالد مشعل نے زور دے کر کہا ہے کہ یروشلم اور مسجد اقصیٰ کا مسئلہ آج گرما گرم تنازعہ کی میز پر آگیا ہے جسے اسرائیلی دشمن جنگ کے ذریعے حل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

بیت المقدس کے حوالے سے منعقدہ ایک فورم سے ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے خالد مشعل نے کہا کہ موجودہ قابض اسرائیلی حکومت نے اپنے اندر کے انتہائی دائیں بازو کے ذریعے فلسطینی عوام کے تئیں اپنی تمام تر تکبر اور فسطائیت کو سامنے لا رہی ہے۔ اسرائیلی ریاست موجودہ حکومت کے انتہا پسند ارکان کے ذریعے مسجد اقصیٰ کی تقسیم سمیت دیگرمختلف ہتھکنڈوں کو عملی جامہ پہنانے کے لیے سرگرم ہے۔

خالد مشعل نے کہا کہ قابض ریاست اپنے منصوبوں کو عملی جامہ پہنانے کے لیے الاقصیٰ کی زمانی اور مکانی تقسیم کے لیے ایڑی چوڑی کا زور لگا رہی ہے۔ مگر فلسطینی قوم کی ثابت قدمی، استقلال اور مزاحمت نے دشمن کی سازشوں کو بری طرح ناکامی سے دوچار کیا ہے۔

مشعل نے اس بات پر زور دیا کہ سیف القدس معرکہ پوری دنیا کے لیے ایک پیغام ہے کہ یہاں مزاحمت باقی ہے اور مسجد اقصیٰ کا دفاع کیا گیا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ پوری فلسطینی عوام یروشلم، مغربی کنارے، اندرونی فلسطینی علاقوں اور غزہ میں اٹھ کھڑی ہوئی ہے اور پوری قوم اور مسلم امہ قبلہ اول کی پشت پر کھڑی ہے۔

انہوں نے کہا کہ امریکا اور غاصب اسرائیل عرب اور ملت اسلامیہ کی مسلسل کمزوری کے لیے کوشاں ہیں تاکہ خطے میں جو کچھ وہ چاہتے ہیں، بالخصوص مقبوضہ فلسطین پر اسے حاصل کریں۔

 

 

یہ بھی دیکھیں

ترک صدر اردوغان نے نیتن یاہو کو غزہ کا قصائی قرار دیدیا

انقرہ:ترک صدر رجب طیب اردوغان نے نیتن یاہو کو غزہ کا قصائی قرار دیا ہے۔ترکی …