جمعہ , 23 فروری 2024

جنوبی یمن میں القاعدہ کا حملہ، اماراتی فوجی کمانڈر ہلاک

صنعا:جنوبی یمن میں متحدہ عرب امارات سے وابستہ نام نہاد "سیکیورٹی بیلٹ” فورسز نے تصدیق کی ہے کہ صوبہ ابین میں ان کا کمانڈر اور اس کے متعدد ساتھی القاعدہ کے حملے میں مارے گئے ہیں۔ متحدہ عرب امارات سے وابستہ نام نہاد سیکورٹی بیلٹ فورسز کا سربراہ یمن کے جنوب میں واقع "ابین” صوبے کے "مودیہ” ضلع میں ایک بم دھماکے میں مارا گیا۔

اس رپورٹ کے مطابق صوبہ ابین کے علاقے "وادی عویمران” میں ان کے قافلے کو نشانہ بنانے والے دھماکہ میں "عبداللطیف السید” ساتھیوں سمیت مارا گیا۔

جنوبی عبوری کونسل کے رکن راجح بکریت نے سوشل میڈیا پر اپنے اکاؤنٹ میں ابین میں سکیورٹی بیلٹ فورسز کے رہنما کی ہلاکت کی تصدیق کی۔

عبداللطیف السید کو جنوبی عبوری کونسل میں سب سے نمایاں سیکورٹی اور فوجی کمانڈروں میں شمار کیا جاتا تھا جس نے ابین اور جنوبی یمن کے کئی صوبوں کو کنٹرول میں لے رکھا تھا۔بعض یمنی ذرائع ابلاغ کے مطابق القاعدہ دہشت گرد تنظیم نے عبد اللطیف کے قتل کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

واضح رہے کہ اب تک جنوبی یمن کی عبوری کونسل کے درجنوں ارکان اور رہنما بارودی مواد کے پھٹنے سے ہلاک ہوچکے ہیں جن میں سے بعض کی ذمہ داری القاعدہ تنظیم نے قبول کی ہے جو تا حال یمن کے کئی صوبوں میں موجود ہے۔

یہ بھی دیکھیں

عمران خان نے تحریک انصاف کے کسی بڑے سیاسی رہنما کے بجائے ایک وکیل کو نگراں چیئرمین کیوں نامزد کیا؟

(ثنا ڈار) ’میں عمران کا نمائندہ، نامزد اور جانشین کے طور پر اس وقت تک …