پیر , 4 دسمبر 2023

نیند میں کمی قلبی صحت پر منفی اثرات مرتب کر سکتی ہے:تحقیق

لندن:مناسب نیند ہماری صحت کے لیے بنیادی حیثیت رکھتی ہے۔ دنیا کی رفتار سے چلنے کی کوشش میں لوگ اکثر نیند کی اہمیت کو فراموش کر بیٹھتے ہیں اور ان کے لیے کام اور آرام کے درمیان توازن قائم کرنا مشکل ہوجاتا ہے۔

نیند اور قلبی صحت ایک دوسرے سے تعلق رکھتے ہیں۔ نیند کے طرز میں کسی بھی قسم کی تبدیلی براہ راست دل کی کارکردگی کو متاثر کر سکتی ہے۔ نیند کی کمی درج ذیل مسائل کا سبب بن سکتی ہے:

بلند فشار خون
نیند کا متاثر چکر بلند فشار خون یا ہائپر ٹینشن کا سبب بن سکتا ہے۔ نیند بلڈ پریشر کو قابو کرنے میں اہم کردار ادا کرتی ہے۔ طویل عرصے تک نیند کی کمی مستقل بلند فشار خون کا سبب بن سکتا ہی جو قلبی مرض اور فالج کا ایک سبب ہے۔

سوزش

نیند میں کمی کی وجہ سے جسم میں سوزش بھی ہوسکتی ہے جو جسم کی کارکردگی پر اثر ڈال سکتی ہے۔ دائمی سوزش کا تعلق خون کی شریانوں کے سکڑنے سے ہوتا ہے جو دل کے دورے اور فالج کا سبب بن سکتا ہے۔

گلوکوز کی سطح میں خلل

نیند میں کمی جسم کی گلوکوز کی سطحوں کو متاثر کرتی ہے جس سے ٹائپ 2 ذیا بیطس کے خطرات بڑھ جاتے ہیں۔ ذیا بیطس کو قلبی مرض کے ایک سبب کے طور پر بھی جانا جاتا ہے۔

وزن میں اضافہ

نیند میں کمی بھوک قابو کرنے والے ہارمونز کا توازن خراب کر سکتی ہے جس کے سبب بھوک اور وزن میں اضافہ زیادہ ہوسکتا ہے۔ قلبی مرض میں مٹاپا ایک اہم کردار ادا کرتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ڈائری لکھنے سے ذہنی و مدافعتی صحت پر کیا اثرات مرتب ہوتے ہیں؟

لندن:کمپیوٹرائزڈ اور اسمارٹ موبائل فون کے دور میں اب اگرچہ ڈائریز لکھنے کا رجحان کم …